نواز شریف کو ملکی خدمت کے صلے میں عدالتوں میں گھسیٹا جارہا ہے ، شاہد خاقان

نواز شریف کو ملکی خدمت کے صلے میں عدالتوں میں گھسیٹا جارہا ہے ، شاہد خاقان

  

کلر سیداں(تحصیل رپورٹر)سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کلر سیداں کے نواحی یونین کونسل بھلاکھر میں ایک انتخابی جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن کے پاس ملکی تعمیر و ترقی جبکہ عمران خان کے پاس اقتدار کی ہوس کا یک نکاتی ایجنڈا ہے ۔ عمران خان کے دائیں بائیں لوٹوں کا جم گٹھا ہے، وہ مشرف ،زرداری اور نواز شریف کے ساتھ بھی رہے، لوٹوں کی ٹیم ملک میں نیا پاکستان نہیں بنا سکتی۔سیاست کا محور نواز شریف ہیں،ملکی خدمت کے صلے میں انہیں عدالتوں میں گھسیٹا جا رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ سابق صدر جنرل پرویز مشرف گزشتہ دو برسوں سے دوبئی میں چھپا بیٹھاہے اسے کچھ نہیں کہا جاتا جبکہ دوسری جانب میاں نواز شریف نے اپنی اہلیہ کو ہسپتال میں موت و حیات کی کشمکش میں چھوڑ کر اپنی بیٹی کے ہمراہ وطن واپس آ کر گرفتاری پیش کر دی،لندن میں بیٹھے رہنا میاں نواز کیلئے کوئی مشکل کام نہ تھا مگر انہوں نے ملکی بقاء کیلئے وطن واپسی کو ترجیح دی ۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان پانچ برسوں میں اسمبلی نہ آئے اورپانچ ماہ تک اسمبلی کے باہر بیٹھ کر پارلیمان کو گالیاں دیں مگر اس کے باوجود وہ آج پارلیمان کا حصہ بننے کیلئے عوام سے ووٹوں کی بھیگ مانگ رہے ہیں ،یہ دوہرا معیار اب نہیں چلے گا ۔انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کے سو دنوں کے پروگرام کے تحت ملک میں ایک کروڑ نوکریاں سب سیاسی دعوے ہیں،اس کیلئے محنت کی ضرورت ہوتی ہے اور یہ کام صرف مسلم لیگ (ن) ہی کر سکتی ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمارے دور میں 5.8 فیصد ترقی ہوئی جو پچھلے 13 برسوں کے مقابلے میں ترقی کی سب سے تیز رفتار ہے۔ جب تک ملک میں ترقی کی رفتار 9 فیصد تک نہیں پہنچے گی ملک میں بے روزگاری کا مسٗلہ حل نہیں ہو گا۔ہم نے سی پیک کے ذریعے ترقی کی بنیاد ڈال دی ہے ۔انہوں نے کہا کہ عمران خان کے دھرنوں نے ملک کو بہت پیچھے دھکیل دیا ہے۔ملک کو آئین کے مطابق چلانا اور تمام ادارے اپنی آئینی حدود میں رہنے کا میاں نواز شریف کا بیانیہ ملکی مسائل کا واحد حل ہے،ہمارا کسی کیساتھ کوئی جھگڑا نہیں۔ہم جانتے ہیں کہ حکومت چلانے میں کن مسائل کا سامنا رہتا ہے۔انہوں نے کہا کہ جب تک ملکی مسائل حل نہیں ہونگے اس وقت تک مقامی مسائل کا خاتمہ بھی ممکن نہیں۔ہمارا پلیٹ فارم ملک کی ترقی اور شرافت پر مبنی ہے جبکہ عمران خان کے پلیٹ فارم میں تعمیر و ترقی کی کوئی بات نہیں۔عمران خان نے اسمبلی کو گالیاں دیں اور اب ان کی کوشش ہے کہ وہ اسی اسمبلی کے دوبارہ ممبر بن سکیں۔ انہوں نے کہا کہ نگران حکومت نے الیکشن کو متنازع بنا دیا ہے ،ان سے شفاف الیکشن کی اب توقع نہیں رہی۔ انہوں نے کہا کہ کوئی شخص جماعت سے بالا تر نہیں ۔ملک میں جتنی تعمیر و ترقی مسلم لیگ (ن) کے دور میں ہوئی ماضی میں اس کی کہیں مثال نہیں ملتی ۔ 25 جولائی کا فیصلہ ملک میں ترقی کے سفر کا تعین کرے گا۔سیاست اور ملک کی تقدیر کے فیصلے عدالتیں نہیں عوام کرتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ملکی معیشت کو ترقی دینے کیلئے جب تک صنعتیں نہیں لگیں گی نوجوانوں کو روزگار کے مواقع میسر نہیں ہونگے۔ مسلم لیگ (ن) تحصیل کلر سیداں کے صدر عبدالغفار چوہدری نے اپنے خطاب میں کہا کہ چوہدری نثار علی خان نے اربوں روپے کے ترقیاتی منصوبے مکمل کروا کر حق نمائندگی ادا کیا،ہماری خواہش ہے کہ چوہدری نثار علی خان اپنے اختلافات بھلا کر ایک بار پھر ہماری صف میں شامل ہو جائیں۔ اس موقع پر انہوں نے اعلان کیا کہ جب تک چوہدری نثار علی خان مسلم لیگ (ن) کا حصہ نہیں بن جاتے اس وقت تک وہ ان سے ہاتھ نہیں ملائیں گے۔سیاست میں ملاوت ناقابل برداشت ہے،ہماری رگوں میں خالص خون ہے ،ہمیشہ نو لیگ کے وفادار تھے اور رہیں گے۔انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) پر جتنا مشکل وقت اب ہے اتنا کبھی ماضی میں تھا نہ ہی آئندہ ہو گا۔وائس چےئرمین ایم سی کلر سیداں چوہدری محمد ضیارب،چوہدری وآصف ایڈووکیٹ، فیصل حفیظ چوہدری،ارکان بلدیہ چوہدری اخلاق حسین، راجہ طارق محمود، پرویز منہاس،لیگی رہنما چوہدری نعیم بنارس،شیخ حسن سرائیکی،شیخ ندیم احمداور دیگر بھی اس موقع پر موجود تھے۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -