شہبازشریف نے نوازشریف کو دھوکا دیا،، عمران خان

شہبازشریف نے نوازشریف کو دھوکا دیا،، عمران خان

بنوں ،کرک(مانیٹرنگ ڈیسک ، نیوز ایجنسیاں) چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے عالمی اسٹیبلشمنٹ کے اشارے پر تمام سیاسی جماعتیں مجھے شکست دینے کیلئے اکٹھی ہوگئی ہیں لیکن میں ان سب جماعتوں کو ہراؤں گا۔بنوں اور کرک میں جلسہ عام سے خطاب کے دور ا ن عمران خان کا کہنا تھا تحریک انصاف کو شکست دینے کیلئے ن لیگ،پی پی و دیگر جماعتیں اکٹھی ہوگئی ہیں،یہ عالمی اسٹیبلمشنٹ کیساتھ مل کر ہمارے خلاف سازش کررہے ہیں لیکن میں ان سب کا مقابلہ کروں گا اور انہیں شکست سے دوچار کروں گا۔ 2013 کے الیکشن کے بعد جب دھاندلی کیخلاف تحریک چلائی تو بھارت اور عالمی طاقتیں (ن) لیگ کیساتھ کھڑی تھیں اور جب فاٹا میں ملٹری آپریشن نہ کرنے کا کہا تو مجھے طالبان خان قرار دیدیا گیا، گزشتہ انتخابات میں تمام جماعتوں نے کہا دھاندلی ہوئی ہے تاہم صرف 4 حلقوں کی تفتیش کا مطالبہ کیا تو کہنے لگا یہ جمہوریت کا دشمن ہے، 2013 کا میچ فکس تھا،چیف جسٹس ریٹائرڈ افتخار چوہدری، الیکشن کمیشن اور ریٹرنگ افسر سب ان سے ملے ہوئے تھے اب یہ کس منہ سے کہہ رہے ہیں دھاندلی ہونیوالی ہے،دراصل یہ اسلئے دھاندلی کا چور مچارہے ہیں کہ انہیں شکست نظر آرہی ہے، میں کہتا ہوں دھاندلی نہیں ان کا صفایا ہونیوالا ہے۔ شہباز شریف نے بھائی کیساتھ ہاتھ کردیا، نوازشریف کو وطن بلایا اور کہا لاکھوں لو گ ایئرپورٹ پر استقبال کریں گے مگر وہ ریلی لے کر کہیں اور نکل پڑے، شہباز شریف نے اپنے بھائی کو دھوکا دیا جو بھائی کیساتھ وفا نہ کرے وہ ملک کیساتھ وفاداری نہیں کرسکتا۔ اڈیالہ جیل بڑے بڑے مگر مچھوں کا انتظار کر رہی ہے۔ میرا مقابلہ نواز شریف اور ان کے پیچھے کھڑی بین الاقوامی اسٹیبلشمنٹ سے ہے کیونکہ عمران خان کو روکنا انٹرنیشنل ایجنڈا ہے۔ یہ لوگ 300 ارب روپے چوری کر کے مظلوم بنے ہوئے ہیں ، شہباز شریف کے چہرے پر خوف دیکھ رہا ہوں، لگتا ہے خواب میں بھی شہباز شریف کو میں نظر آتا ہوں۔ بلاول بھٹو کہتا ہے نیا معا ہدہ عمرانی ہونا چاہیے، عمرانی معاہدہ کے نام سے نیا گیم کھیلا جا رہا ہے اور ڈالر کی بڑھتی ہوئی قیمت میثاق جمہوریت کا ہی تحفہ ہے۔ہم اقتدار میں آکر نیا بلدیاتی نظام متعارف ، ناظم کے براہ راست انتخابات کرائیں گے اور بلدیاتی نظام کے تحت عوام کو سہولیات دیں گے۔ رکن صوبا ئی اسمبلی اور قومی اسمبلی کا کام ترقیاتی کام نہیں ہوتا بلکہ ان کا کام قانون سازی کرنا ہوتا ہے۔ کرپشن ہوتی ہی اس وقت ہے جب ترقیاتی فنڈ اراکین اسمبلی کو ملتا ہے، جو پیسہ عوام پر خرچ ہونا ہوتا ہے وہ لوگوں کی جیبوں میں چلا جاتا ہے۔ سب سے پہلے نیب کو مضبوط کریں گے اور نیب کی صلاحیت میں اضافہ کریں گے۔ سب سے پہلے احتساب مجھ سے اور میرے وزیروں سے شروع ہوگا ۔ ہم تجربہ کار شخص کو ضلع ناظم بنائیں گے ، ضلع ناظم اپنے ساتھ ٹیکنو کریٹ کی پوری ٹیم بنائے گا ، یہ ٹیم علاقہ کے مسائل دیکھے گی ۔سب سے بڑا مسئلہ پانی ہے ، پانی کا مسئلہ سیاستدان حل نہیں کریں گے بلکہ ٹیکنو کریٹ عوام کی مشاورت سے فیصلہ کریں گے ۔ ہم بلدیاتی اداروں کے ذریعے ترقیاتی کام کروائینگے

عمران خان

مزید : کراچی صفحہ اول