ترقیاتی کاموں کا لالچ ۔۔۔عائشہ نذیر جٹ کو ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر نوٹس

ترقیاتی کاموں کا لالچ ۔۔۔عائشہ نذیر جٹ کو ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر نوٹس

بورے والا(تحصیل رپورٹر) این اے162 میں آزاد امیدوار عائشہ نذیر جٹ کو ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر نوٹس جاری کردیا گیا۔عائشہ نذیر جٹ پر نواحی گاؤں 519ای بی میں ترقیاتی کام کروانے کا الزام،عائشہ نذیر جٹ اپنی جیب سے ترقیاتی کاموں کا لالچ دیکر عوام کا ووٹ(بقیہ نمبر36صفحہ12پر )

خرید رہی ہیں،امیدوار قومی اسمبلی پی ٹی آئی چوہدری خالدمحمود چوہان نے الیکشن کمیشن کو درخواست دیدی۔تفصیلات کے مطابق حلقہ این اے162سے پی ٹی آئی کے امیدوار چوہدری خالد محمود چوہان کی جانب سے ڈی سی وہاڑی/ڈسٹرکٹ مانیٹرنگ آفیسر کو دی گئی تحریری درخواست میں الزام عائد کیا گیا کہ اْنکے مدمقابل آزاد امیدوار عائشہ نذیر جٹ نے نواحی گاؤں519ای بی میں ووٹرز پر اثر انداز ہونے کیلئے پورے گاؤں میں سولنگ لگوانے کے لیے راتوں رات مٹی ڈلوا کر ترقیاتی کام شروع کروا دیا ہے جو کہ ووٹرز کو خریدنے اور ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی ہے اس درخواست کی روشنی میں ڈسٹرکٹ مانیٹرنگ آفیسر /ڈپٹی کمشنر وہاڑی عرفان علی کاٹھیا نے امیدوار قومی اسمبلی عائشہ نذیر جٹ اور امیدوار صوبائی اسمبلی چوہدری عثمان احمد وڑائچ کو اپنے دفتر طلب کر لیا جبکہ دریں اثناء ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ ڈی سی وہاڑی نے حقائق جاننے کیلئے اسسٹنٹ کمشنر بورے والا محمد عظیم ربانی کو موقع پر پہنچنے کی ہدایت کی جنہوں نے محکمہ مال اور بلدیہ کے عملہ اور پولیس کے ہمراہ موقع ملاحظہ کیا تو موقع پر مٹی سے بھری ہوئی ٹرالیاں موجو د تھیں اور سڑک پر ٹریکٹر کے ذریعہ سے کام ہو رہا تھامانیٹرنگ ٹیم نے حقائق کی روشنی میں اپنی تحقیقاتی رپورٹ ڈی سی وہاڑی کو مزید کاروائی کے لیے ارسال کر دی ہے۔ پی ٹی آئی کے امیدوار خالد محمود چوہان نے میڈیا کو بتایا کہ اْنکے مدمقابل امیدوار عائشہ جٹ حلقہ میں ذاتی پیسہ سے ووٹرز کو لالچ دینے کے لیے ترقیاتی کام کروا کے ناصرف ہمارے بلکہ دیگر امیدواروں کے ووٹرز پر بھی اثر انداز ہو رہی ہیں جو کہ ضابطہ اخلاق کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے جس پر الیکشن کمیشن کو فوری کاروائی کرنی چاہئے۔لوگوں کے مطابق گاؤں میں نذیر جٹ گروپ ووٹ لینے کے لیے مٹی ڈال رہا ہے اور اہل دیہہ نے جو اس سے زبان کی ہے وہ پوری کریں گے اس سلسلہ میں آج عائشہ نذیرجٹ کی حمایت کا جلسہ بھی گاؤں کے چوک میں رکھا گیا ہے ۔واضح رہے کہ 10روز قبل اہل دیہہ نے احتجاجی مظاہرہ کیا تھاجس میں انہوں نے الیکشن کے بائیکاٹ کا اعلان کیا تھا اور اپنا مطالبہ رکھا تھا کہ جو امیدوار ان کے کام کروائے گا وہ اس کو ووٹ دیں گے مخالفین کااگر یہ الزام درست ثابت ہو گیا تو عائشہ نذیر جٹ کو انتخابی عمل میں شدید دشواریوں کا سامنا کرنا پڑے گا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر