تحصیل ثمر باغ ،گھر میں آتشزدگی ،2 افراد جھلس گئے

تحصیل ثمر باغ ،گھر میں آتشزدگی ،2 افراد جھلس گئے

  

جندول(نمائندہ پاکستان ) تحصیل ثمرباغ محلہ سیرئی میں گھر کے باورچی خانہ میں آگ بھڑک اٹھنے سے خاتون اور اس کا شوہر جھلس گئیں ، مقامی ہسپتال ثمرباغ میں ہسپتال عملہ کے انکار کی وجہ سے زخمی ابتدائی علاج کے بغیر تشویشناک حالت میں تیمرگرہ منتقل ،لوحقین کا شدید احتجاج۔ تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز شعیب جان ولد فداء محمد پاچہ ساکن سیرئی کے گھر کے باورچی خانہ میں گیس لیکیج کی وجہ سے صبح کے وقت شدید آگ بھڑ ک اٹھی جس کے نتیجہ میں باورچی خانہ میں موجود شعیب کی زوجہ کو آگ لگ گئی اس دوران شعیب اہلیہ کو بچانے کیلئے اس کے قریب گئیں تو اسے بھی آگ لگ گئیں جس کے بعد قریب کھڑے گھر کے دیگر لوگوں نے آگ تو بجھا لیا مگر اس دوران میاں بیوی کے وجود کے زیادہ تر حصے شدید جل چکے تھے ، زخمیوں کو فوری طور پر ہسپتال ثمرباغ منتقل کیا گیا تو ایمرجنسی میں کوئی خاتون نرس موجود نہیں تھی ،مریضوں کے لواحقین کے مطابق چونکہ زخمی خاتون کا علاج خاتون سٹاف کے بغیر ممکن نہیں تھا اس لئے انہوں نے ہر نرس اور خاتون سٹاف کا دروازہ کھٹکھٹایا مگر کسی نے نکلنے کی زہمت نہیں کی اس لئے مریضوں کے لواحقین نے مریضوں کو ایمبولینس میں ڈال کر تشویشناک حال میں ضلعی ہیڈ کوارٹر ہسپتال تیمرگرہ اور اس کے بعد پشاور منتقل کر دیا۔ مریضوں کے لواحقین نے وقتی طور پر ہسپتال عملہ کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ ہسپتال ثمرباغ میں سفارشی عملی تعینات ہیں جس کی وجہ سے کوئی مائی کا لعل انہیں ڈیوٹی کیلئے نہیں نکال سکتا ۔ مریضوں کے لواحقین نے کہا کہ اگر ان کے مریضوں کو کچھ ہوا تو ڈیوٹی سے غفلت برتنے والے اہلکاروں کے خلاف ایف آئی آر درج کرایا جائے گا اور ساری ذمہ داری ہسپتال انتظامیہ پر ہوگی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -