حکومت میں نہ ہونے کے باوجود کراچی کا مقدمہ لڑا،حافظ نعیم الرحمن

حکومت میں نہ ہونے کے باوجود کراچی کا مقدمہ لڑا،حافظ نعیم الرحمن

کراچی اسٹاف رپورٹر)جماعت اسلا می کراچی کے امیر و مجلس عمل کے حلقہ PS۔129نارتھ ناظم آباد کے نامزد امیدوار حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ ہمارے پاس نہ حکومت تھی اورنہ اقتدار تھا لیکن پھر بھی ہم نے کراچی کے عوام کا مقدمہ لڑا ،شہریوں کو نادرا کے مسائل کے حوالے سے ریلیف دلوایا،شہر میں ٹرانسپورٹ اور پانی سمیت دیگرمسائل بھی حل کرائیں گے ،کراچی میں پانی کا مسئلہ اتنا مشکل نہیں جتنا بھتہ خوروں ،چوروں اور لٹیروں نے مشکل بنا دیا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے حلقہ انتخاب PS۔129کے علاقے ڈیسلوا کالونی پہاڑ گنج میں کارنر میٹنگ سے خطاب اورنارتھ ناظم آبادکے مختلف بلاکس میں عوام سے ملاقاتوں کے دوران عوام سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔حافظ نعیم الرحمن نے خطاب کرتے ہوئے مزید کہاکہ نادرا کے ایس اوپی میں ترمیم کرنا جماعت اسلامی کی عوامی جدوجہد کی کامیابی اور فتح ہے۔انہوں نے کہاکہ آج پورا ملک قرضوں میں ڈوبا ہوا ہے پاکستان کا ہر شہری ورلڈ بینک اور آئی ایم ایف کا قرض دار ہو چکا ہے اس کی وجہ یہ ہے کہ عوام کے نام پرحکمران قرضہ لیتے ہیں اور عوام کی ترقی پر لگانے کے نجائے اپنی جیبیں بھرتے ہیں جب تک ہم دیانتدار اور ایماندار قیادت کو سامنے نہیں لائیں گے ذلت اور رسوائی کا سامنا کرنا پڑے گا ،جب تک ملک سے سود کا نظام ختم نہیں ہوتا ہم مزید قرضوں میں جکڑے رہیں گے۔عوام باشعور ہیں وہ خود سوچیں اورایماندار اور اہل قیادت کا ساتھ دے کر مجلس عمل کو کامیاب کرائیں۔انہوں نے کہاکہ متحدہ مجلس عمل دینی جماعتوں کا اتحاد ہے جو تمام مسالک کی نمائندگی کرتی ہے

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر