آزادی یا شہادت تحریک کشمیر کا نعرہ بن چکا ہے،مولانا سجاد

آزادی یا شہادت تحریک کشمیر کا نعرہ بن چکا ہے،مولانا سجاد

مظفرآباد (سٹی رپورٹر)آزادی یا شہادت تحریک کشمیر کا نعرہ بن چکا ہے ہندوستان کشمیریوں کی جدوجہد کو نہیں دبا سکتا کشمیری مجاہدین کی لازوال قربانیوں کو سلام عقیدت و خراج تحسین پیش کرتے ہیں ان خیالات کا اظہار انصارلامہ جموں و کشمیر کے مرکزی نائب امیر مولانا محمد سجاد شاہد نے کیا انہوں نے کہا کہ کشمیریوں کی جہد مسلسل عنقریب بار آور ہو کر منزل سے ہمکنار ہوگی کشمیریوں نے ایک طویل عرصہ بہت مشکلات برداشت کی ہیں مگر کوئی بھی ایسی شب نہیں ہے کہ جس کی سحر نہ ہو انہوں نے کہا کہ ہمارے حکمرانوں کو چاہئے کہ وہ کشمیریوں کی جدوجہد انکی شہادتوں کو ضائع ہونے سے بچائیں کیونکہ کشمیریوں کا خون بھی اتنا ہی مہنگا ہے جتنا کہ کسی اور کا ہے کشمیریوں کے بھی اس دنیا میں وہی حقوق ہیں جو دنیا کے کسی دوسرے خطے کے ا نسان کو حاصل ہیں عالمی برادری کو بھی چاہئے کہ وہ اہل کشمیر کو بھی اپنے جیسا انسان سمجھیں انہوں نے کہا ایک لاکھ سے اوپر کشمیری اسوقت تک جام شہادت نوش کر چکے ہیں جبکہ بالمقابل کئی ہزار اسوقت پابند سلاسل ہیں اربوں روپے کی املاک تباہ ہو چکی ہیں جبکہ لاقانونیت کا دور دورہ ہے انہوں نے کہا کہ کشمیر میں اسوقت ایک انسانی المیہ جنم لے چکا ہے اگر اسکا حل نہ نکالاگیا تو پورے خطے کا امن سبوتاژہوجایگا اہل علم کی بھی زمہ داری بنتی ہے کہ وہ مسئلہ کشمیر کو تحریرتقریر اور محراب و منبر سے اجاگر کرئیں کیونکہ یہ کئی کروڑ انسانوں کی بقا کا مسئلہ ہے گزشتہ تین عشروں سے کشمیرمیں جو آگ و بارود کی بارش جاری ہے اب اسکو ختم ہونا چاہئیے اور یہ تب ہی ختم ہوگی جب کشمیر آ زاد ہو کر پاکستان کا حصہ بن جایگا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر