پیپلز پارٹی کا سندھ کی نگران حکومت پر معتصبانہ رویے کا الزام

پیپلز پارٹی کا سندھ کی نگران حکومت پر معتصبانہ رویے کا الزام
پیپلز پارٹی کا سندھ کی نگران حکومت پر معتصبانہ رویے کا الزام

  

کرا چی (ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان پیپلز پارٹی نے سندھ کی نگراں حکومت پر معتصبانہ رویے کا الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ پی پی پی کو ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا بہانہ بنا کر جلسہ کرنے کی اجازت نہیں دی گئی، نگراں حکومت کا پی پی پی اور دیگر جماعتوں کے لیے ضابطہ اخلاق مختلف ہے۔

تفصیلات کے مطابق پیپلز پارٹی سندھ کے جنرل سیکریٹری وقار مہدی کی جا نب سے جا ری کر دہ بیان میں کہا گیا کہ سندھ کی نگراں حکومت کے متعصبانہ رویے کی مذمت کرتے ہیں،پیپلز پارٹی کو گذشتہ ہفتے ضابطہ اخلاق کا بہانہ بنا کر جلسے کی اجازت نہیں دی گئی جبکہ متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم )پاکستان کو روڈ پر جلسہ کرنے کی اجازت دے دی گئی۔انہوں نے کہا کہ نگراں حکومت کا پی پی پی اور دیگر جماعتوں کے لیے ضابطہ اخلاق مختلف ہے، پوری انتخابی مہم کے دوران ضابطہ اخلاق کو بہانہ بنا کر پیپلزپارٹی کے ساتھ زیادتیاں کی گئیں، انتظامیہ بعض کے ساتھ سگے اور دیگر کے ساتھ سوتیلے پن کا مظاہرہ کررہی ہے، نگراں صوبائی وزیراعلی اور ان کی انتظامیہ کے کردار پر شفاف انتخابات سے متعلق متعدد سوالات جنم لے رہے ہیں۔انہوں نے سوال کیا کہ پنجاب کے کامیاب دورے کے بعد کراچی میں بلاول بھٹو زرداری کو جلسہ کیوں نہیں کرنے دیا گیا؟ پیپلز پارٹی کو کراچی میں جلسے کی اجازت نہ دے کر صوبائی انتظامیہ کا کردار مشکوک ہوچکا ہے۔وقار مہدی نے مطالبہ کیا کہ چیف الیکشن کمشنر، صوبائی حکومت کے غیر منصفانہ اقدامات کا فوری نوٹس لیں۔

مزید :

الیکشن -سندھ اسمبلی -علاقائی -سندھ -کراچی -