مردان سے آل گورنمنٹ ایمپلائز گرینڈ الائنس کا مطالبات کے حل کیلئے احتجاج

مردان سے آل گورنمنٹ ایمپلائز گرینڈ الائنس کا مطالبات کے حل کیلئے احتجاج

  

مردان (بیورورپورٹ) آل گورنمنٹ ایمپلائز گرینڈ الائنس نے مطالبات کے حل کے لئے مردان سے احتجاجی تحریک کا آغازکردیا،سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافے،پنشن کے لئے عمر کی حد میں کمی، سالانہ ایکریمنٹ کاٹنے او رپروفیشنل ٹیکس کے خلاف مردان،صوابی،نوشہرہ اور چارسدہ کے ہزاروں سرکاری ملازمین نے ٹی ایم اے سے کالج چوک تک زبردست ریلی نکالی اور نعرہ بازی کرتے ہوئے اپنی قوت کا بھرپور مظاہرہ کردیا مختلف سرکاری محکموں کے ملازمین پر مشتمل آل گورنمنٹ ایمپلائز گرینڈ الائنس نے حالیہ بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافے نہ ہونے سمیت دیگر مطالبات کے لئے طبل جنگ بجاتے ہوئے اپنی احتجاجی تحریک شروع کردیاہے منگل کے روچارسدہ،صوابی،نوشہرہ اور مردان کے سرکاری دفاتر سے سینکڑوں ملازمین الگ الگ جلوسوں کی شکل میں ٹی ایم اے مردان پہنچے جہاں احتجاجی جلسہ منعقد ہوا جس سے خطاب کرتے ہوئے گرینڈ الائنس کے مرکزی چیئرمین حاجی مناف خان،اپیکا کے مرکزی صدر فضل غفار باچہ،ورکرز فیڈریشن کے مرکزی صدر شوکت علی انجم،الائنس کے صوبائی صدراسلام الدین خان،اپیکا کے صوبائی جنرل سیکرٹری سجاد احمد یوسفزئی،آڈیٹر ایسوسی ایشن صوبائی صدر حیدرعلی خان،سینئر آفیسر ایسوسی ایشن کے صدر سمیع اللہ خان اپیکا کے ضلعی صدر مرتضیٰ باچہ،ملگری استاذان کے صد رعثمان سنگر، کوارڈینٹر کونسل کے چیئرمین حافظ زبیراحمد، حافظ محمدانعام،ایس ایس ٹی ایسوسی کے صدر اکرام باچہ،ایم ڈی اے ایمپلائز یونین صدر فیض اللہ خان اوردیگر نے کہاکہ آئی ایم ایف کی ایماء پر پنشن اور گریجویٹی ختم کرنا اورمحکموں میں ایڈھاک ازم لارہی ہے جس کے لئے سرکاری ملازمین ہر گز تیارنہیں انہوں نے حالیہ بجٹ کو مسترد کرتے ہوئے کہاکہ کمرتوڑ مہنگائی میں سرکاری ملازمین پر زمین تنگ کردی گئی ہے حکمرانوں کوشرم آنی چاہئے خودعیاشیاں کررہے ہیں سرکاری ملازمین پر ظلم وستم کے پہاڑ توڑ ڈالے گئے ہیں ہمارے بچے بھوک سے مررہے ہیں انہوں نے خزانے کو تالے لگانے کی دھمکی دیتے ہوئے کہاکہ حکومت کا کوئی بھی بل پاس نہیں کریں گے انہوں نے تمام سرکاری ملازمین کو یکساں سہولیات او ر تنخواہوں اور مراعات میں دوسو فیصد اضافہ کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ احتجاجی تحریک کا آغاز آج مردان سے کردیاگیاہے ہم جیلوں سے ڈرنے والے نہیں اپنے مطالبات منواکر دم لیں گے مقررین نے کہا کہ احتجاجی تحریک کا دائرہ دیگرڈویژنل اضلاع کے بعد صوبوں اور مرکز تک بڑھایاجائے گا۔ بعدازاں جلسے کے احتتام پر ٹی ایم اے سے کالج چوک تک ریلی نکالی گئی ریلی کے شرکاء اپنے مطالبات او رحکومت کے خلاف نعرہ بازی کررہے تھے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -