اسلام آباد ہائیکورٹ نے حکومت کو پی ٹی ڈی سی میں مزید بھرتیوں سے روک دیا،سیکرٹری کابینہ ڈویژن 10 اگست کو ذاتی حیثیت میں طلب

اسلام آباد ہائیکورٹ نے حکومت کو پی ٹی ڈی سی میں مزید بھرتیوں سے روک ...
اسلام آباد ہائیکورٹ نے حکومت کو پی ٹی ڈی سی میں مزید بھرتیوں سے روک دیا،سیکرٹری کابینہ ڈویژن 10 اگست کو ذاتی حیثیت میں طلب

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد ہائیکورٹ نے حکومت کو پی ٹی ڈی سی میں مزید بھرتیوں سے روک دیا،اسلام آبادہائیکورٹ کے جسٹس عامر فاروق نے وفاق کا جواب نہ آنے پر اظہار برہمی کرتے ہوئے کہاکہ وضاحت کریں کہ زلفی بخاری اور پی ٹی ڈی سی کیخلاف درخواستوں میں جواب جمع کیوں نہیں ہوا،عدالت نے سیکرٹری کابینہ ڈویژن 10 اگست کو ذاتی حیثیت میں اسلام آباد ہائیکورٹ طلب کرلیا ۔

میڈیارپورٹس کے مطابق اسلام آبادہائیکورٹ میں پی ٹی ڈی سی ملازمین کی برطرفی کیخلاف درخواست پر سماعت ہوئی ،وکیل ملازمین نے کہاکہ ملازمین کی برطرفی کے یکم اور7جولائی کے نوٹیفکیشن کالعدم قرار دیئے جائیں،زلفی بخاری کی بطور چیئرمین پی ٹی ڈی سی تعیناتی کے خلاف درخواست میں جواب جمع نہ ہوسکا، جسٹس عامر فاروق نے وفاق کا جواب نہ آنے پر اظہار برہمی کرتے ہوئے کہاکہ وضاحت کریں کہ زلفی بخاری اور پی ٹی ڈی سی کیخلاف درخواستوں میں جواب جمع کیوں نہیں ہوا۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے سیکرٹری کابینہ ڈویژن کو 10 اگست کو ذاتی حیثیت میں طلب کرتے ہوئے سماعت 10 اگست تک ملتوی کردی۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -