پارلیمنٹ کا اختیارکسی کواستعمال نہیں کرنےدینگے:وزیراعظم

پارلیمنٹ کا اختیارکسی کواستعمال نہیں کرنےدینگے:وزیراعظم
پارلیمنٹ کا اختیارکسی کواستعمال نہیں کرنےدینگے:وزیراعظم

  

اسلام آباد ( مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے پارلیمنٹ سے پہلے خطاب میں اپنے انتخاب پر اتحادی جماعتوں کا شکریہ ادا کیا اور سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کو سلام پیش کیا ہے ۔انکا کہنا تھا کہ یوسف رضا گیلانی نے نئی جمہوری روایات کوفروغ دیااور سخت مشکلات کے باوجودآئین کی پاسداری کی ۔وزیراعظم نے آئین اور پارلیمنٹ کی بالادستی قائم رکھنے کا عزم کیا اور کہا کہ پارلیمنٹ کا اختیار کسی کو استعمال نہیں کرنے دیا جائے گا۔ مفاہمتی پالیسی جاری رکھنے کا اعلان کرتے ہوئے انہوں نے اپوزیشن سے تعاون کی اپیل کی اور انہیں مسائل کے حل کیلئے مذاکرات کی دعوت دی ۔انکا کہنا تھا کہ تاریخ کے اہم موڑپرکھڑے ہیں, سیاسی جمہوری عمل کواحتیاط سے آگے بڑھانے کی ضروررت ہے۔وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ملک عوام ی مر ضی سے ہی چل سکتا ہے ،پارلیمنٹ عوام کی امنگوں کی آخری امیدہے اور عوام کی مرضی انتخابات میں معلوم ہوتی ہے۔انکا کہنا تھا کہ پا رلیمنٹ کی بالا د ستی کے یقینی بنا ئے گے اور ملک کو درپیش چیلنجز سے نمٹنے کےلئے حزب اختلاف کو مذاکرات کو دعوت دیتا ہوں۔وزیراعظم راجہ پرویز اشرف کا کہنا تھا کہ مذہبی انتہا پسندی سے پاکستان کوناقابل تلاقی نقصان پہنچ رہا ہے، انتہا پسند ہتھیار پھینک کر قومی دھارے میں شامل ہوں۔انکا کہنا تھا کہ ایران،افغانستان اوربھارت کیساتھ پرامن تعلقات چاہتے ہیں اور اسلامی دنیا اوریورپی یونین سے تعلقات بہترمضبوط بنائینگے۔انکا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی اداروں اورشخصیات کا فرق سمجھتی ہے، بے روزگاری، مہنگائی اور توانائی کے مسائل کے حل کیلئے بھرپور کوشش کریں گے۔انکا کہنا تھا کہ افغانستان میں امن تک پاکستان میں امن نہیں ہوسکتااور پاکستان خطے اوردنیامیں امن واستحکام کیلئے کام کرتارہے گا۔وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان کی بہتری کیلئے اپنی تمام صلاحیتیں استعمال کرونگا اورقائداعظم کے وژن کی روشنی میں پاکستان کوچلاونگا۔انکا کہنا تھا کہ اپوزیشن تعاون کرے تاکہ احتساب بل فوری طور پر منظور ہوسکے۔ مسلم لیگ(ن) کے سینئر رہنما سردار مہتاب عباسی کا خطاب کر تے ہو ئے کہنا تھا کہ مجھے اپنی جماعت کی طرف سے وزیراعظم کے عہدے کےلئے نامزد کیا ، ہمیں اپنے ووٹوں کی تعداد کا علم تھا۔انکا کہنا تھا کہ لیڈر آف ہاوس کے منتخب ہونے سے قوم مایوسی کے اندھیرے میں ڈوب گئی ہے۔

مزید :

سیاست -اہم خبریں -