ہوائی جہاز کے مسافروں کو جلد گوگل گلاس عینک پہنے فضائی میزبان خوش آمدید کہیں گے

ہوائی جہاز کے مسافروں کو جلد گوگل گلاس عینک پہنے فضائی میزبان خوش آمدید کہیں ...

لندن (بیورورپورٹ) ہوائی جہاز کے مسافروں کو جلد ہی گوگل گلاس عینک پہنے فضائی میزبان خوش آمدید کہا کریں گی، اس پیش رفت کو مختلف فضائی کمپنیوں کی طرف سے اپنی آپریشنل خدمات میں بہتری کے اقدام سے تعبیر کیا جا رہا ہے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ایوی ایشن صنعت کیلئے نئی تزویراتی ٹیکنالوجی ریسرچ کے ادارے سیٹا کے سربراہ ریناڈ ارمنگر نے برسلز میں آئی ٹی سمٹ کے موقع پر بتایا کہ سیٹا اور ٹیکنالوجی کے ماہرین آجکل کئی ائیر لائنز اور ائیر پورٹس سے بات چیت میں مصروف ہیں تاکہ وہ اس ٹیکنالوجی کو جلد سے جلد عملی میدان میں کام کرتا دیکھ سکیں یو اے ای کی سرکاری فضائی کمپنی اتحاد ائیرویز سمیت کئی ائیر لائنز کے عملے پہلے بھی سیٹا کی فراہم کردہ ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہیں تاکہ وہ مسافروں سے متعلق اور آپریشنل معلومات تک رسائی حاصل کر سکیں مگر اس موقع پر ابھی بھی کئی ائیر لائنز نے جہاز کے دروازے پر اس ٹیکنالوجی کی مدد سے مسافروں کے استقبال پر پابندی لگا رکھی ہے گوگل گلاس یا چشمہ آنکھوں پر لگایا جانے والا کمپیوٹر ہے ۔

جسے آواز اور لمس کے ذریعے کنٹرول کیا جاتا ہے گوگل گلاس دراصل ایک ایسا سمارٹ فون ہے جس سے تصاویر اور ویڈیوز بنائی جا سکتی ہیں انٹرنیٹ سے کنکشن کے ذریعے یہ گوگل گلاس پہننے والے کو بتا سکتا ہے کہ اس کی لوکیشن کیا ہے یعنی وہ کہاں کھڑا ہے اور سامنے والی بلڈنگ کا نام اور پتہ کیا ہے۔

مزید : عالمی منظر


loading...