بینکوں کے زرعی قرضے کی تقسیم سالانہ ہدف کے مزید قریب ہوگئی

بینکوں کے زرعی قرضے کی تقسیم سالانہ ہدف کے مزید قریب ہوگئی

لاہور ( کامرس رپورٹر)بینکوں کے زرعی قرضے کی تقسیم سالانہ ہدف کے مزید قریب ہوگئی ہے جس سے پاکستانی کاشتکاروں کو فائدہ ہورہا ہے۔ رواں مالی مالی سال کے پہلے گیارہ مہینوں یعنی جولائی سے مئی 2014ءکے دوران بینکوں نے334.7 ارب روپے کے زرعی قرضے تقسیم کیے جو سالانہ ہدف 380 ارب روپے کا 88 فیصد ہے اور کچھ بینک پہلے ہی اپنے سالانہ اہداف عبور کرچکے ہیں۔یاد رہے کہ بینکوں کے ساتھ حالیہ اجلاس میں اسٹیٹ بینک کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر سید ثمر حسنین نے کاشتکار برادری کو قرضے کی تقسیم بڑھانے کی ضرورت پر زور دیا تھا اور بینکوں کو تاکید کی تھی کہ 2013-14ءکے لیے زرعی قرضے کی تقسیم کے سالانہ ہدف 380 ارب روپے کے حصول کو یقینی بنائیں۔یہ تقسیم گذشتہ برس کی اسی مدت میں تقسیم کیے گئے 294.5 ارب روپے سے 13.6 فیصد زیادہ ہے۔ زرعی قرضے کا واجب الادا پورٹ فولیو 30.3 ارب روپے (12.3 فیصد) بڑھ گیا یعنی پچھلے سال کی اسی مدت کے مقابلے میں آخر مئی 2014ءمیں 246.7 ارب روپے سے بڑھ کر277 ارب روپے ہوگیا۔پانچ بڑے بینکوں نے بحیثیت گروپ 169.4 ارب روپے زرعی قرضے تقسیم کیے جو ان کے سالانہ ہدف کا 90.1 فیصد اور گذشتہ برس کی اسی مدت میں تقسیم کیے گئے 157 ارب روپے سے 7.9 فیصد زائد ہے۔

 بڑے بینکوں میں حبیب بینک، ایم سی بی، یونائٹیڈ بینک، نیشنل بینک اور الائیڈ بینک نے اپنے اپنے سالانہ اہداف کا بالترتیب 92.5 فیصد، 92.4 فیصد، 91.9 فیصد، 91.7 فیصد اور 78.9 فیصد حاصل کیا۔تخصیصی بینکوں میں زرعی ترقیاتی بینک نے 64.7 ارب روپے تقسیم کیے جو اس کے سالانہ ہدف 69.5 ارب روپے کا 93.1 فیصد ہے جبکہ پنجاب پراونشل کو آپریٹو بینک نے زیر جائزہ مدت کے دوران6.6 ارب روپے تقسیم کر کے اپنے 10.0 ارب روپے کے ہدف کا 66.2 فیصد حاصل کر لیا۔چودہ ملکی نجی بینکوں نے اپنے سالانہ اہداف کا مجموعی طور پر 81.6 فیصد پورا کےا۔ ملکی نجی بینکوں کے زمرے مےں اسٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک اپنا سالانہ ہدف پہلے ہی پورا کر چکا ہے، جبکہ بینک الحبیب نے اپنے سالانہ ہدف کا 96.6 فیصد، سندھ بینک نے 96.2 فیصد، بینک آف پنجاب نے 93.2 فیصد، بینک الفلاح نے 89.5 فیصد، فیصل بینک نے 89.1 فیصد، سمٹ بینک نے 85.3 فیصد، بینک آف خیبر نے 84.4 فیصد، حبیب میٹرو پولیٹن بینک نے 81.2 فیصد، سونیری بینک نے 79.4 فیصد اور سلک بینک نے اپنے سالانہ ہدف کا 68 فیصد حاصل کےا۔ نےز، این آئی بی بینک 56.2 فیصد، کے اے اےس بی بینک 40 فیصد اور عسکری بینک سالانہ ہدف کا صرف 31 فیصد پورا کر سکا۔سات مائکرو فنانس بینکوں نے بطور اےک گروپ، 19.6 ارب روپے ےا 21.6 ارب روپے کے سالانہ ہدف کا 90.8 فیصد پورا کےا۔ مائکرو فنانس بینکوں مےں تعمےر مائکرو فنانس بینک، ےو مائکرو فنانس بینک، پاک عمان مائکرو فنانس بینک اور خوشحالی بینک اپنے اپنے سالانہ اہداف کو پہلے ہی پورا کر چکے ہےں، جبکہ این آر ایس پی مائکرو فنانس بینک، وسیلہ اورفرسٹ مائکرو فنانس بینک اپنے اہداف کا بالترتیب 80.5 فیصد، 71.6 فیصد اور 69.3 فیصد پورا کر سکے۔ جولائی تا مئی 2014ءکے دوران اسلامی بینکوں کے زمرے مےں تےن بینکوں نے 532 ملین روپے ہدف کے مقابلے مےں 523.9 ملین روپے جاری کر کے اپنے سالانہ اہداف کا مجموعی طور پر 98.5 فیصد پورا کےا۔

مزید : کامرس


loading...