پاکستان کاآئی ایم ایف کے ساتھ آخری سہ ماہی کا جائزہ تعطل کا شکار ہونے کا خدشہ

پاکستان کاآئی ایم ایف کے ساتھ آخری سہ ماہی کا جائزہ تعطل کا شکار ہونے کا خدشہ

دبئی(آئی اےن پی) عالمی مالیاتی فنڈ نے چھ ارب ستر کروڑ ڈالر قرضے کے بدلے میں پاکستان سے توانائی کے شعبے میں اصلاحات کرتے ہوئے بجلی مہنگی، سبسڈی ختم، پاور سیکٹر کی تنظیم نو،، پی آئی اے اور دیگر اداروں کی نجکاری کی شرائط پیش کی تھیں لیکن اب تک نہ تو بجلی پر سبسڈی کا مکمل خاتمہ ہوسکا اور نہ ہی پی آئی اے کی نجکاری کے لئے مالی مشیر کا تقرر کیا جاسکا،جس کے پیش نظر آئی ایم ایف کی جانب سے رواں مالی سال کی آخری سہ ماہی کا جائزہ تعطل کا شکار نظر آتا ہے، معاشی جائزے کے لئے پاکستان اور آئی ایم ایف حکام کا اجلاس جولائی میں ہونا تھا، لیکن شرائط پر عمل نہ ہونے کے باعث اب یہ اجلاس اگست میں ترکی میں متوقع ہے۔

مزید : کامرس


loading...