پاکستان کا بھارت سے تجار ت میں خسارہ 1ارب47کروڑ ڈالر سے تجاوز کر گیا

پاکستان کا بھارت سے تجار ت میں خسارہ 1ارب47کروڑ ڈالر سے تجاوز کر گیا

                                                                                                لاہور( کامرس رپورٹر)بھارت کی جانب سے پاکستان کے خلاف نان ٹیرف اور سیاسی رکاوٹوں کے سبب بھارت کو پاکستانی مصنوعات کی برآمدات صرف40کروڑ30 لاکھ ڈالر تک محدود ہیں۔اس کے برعکس بھارت نے سال 2013 میں پاکستان کو 1ارب 87کروڑ 40لاکھ ڈالر کی مصنوعات برآمد کیں، پاک بھارت باہمی تجارت کا حجم 2013میں 2.3ارب ڈالر رہا تاہم تجارت کا توازن بھارت کے حق میں جھکتا جارہا ہے، سال 2012میں بھارت نے پاکستان کو 1 ارب 57کروڑ ڈالر کی مصنوعات برآمد کی تھیں جبکہ پاکستان سے بھارت کو ایکسپورٹ 34کروڑ 80لاکھ ڈالر تک محدود رہی تھی، ایک سال کے دوران پاکستان کو بھارتی ایکسپورٹ میں 30کروڑ10 لاکھ ڈالر کا اضافہ ہوا جبکہ پاکستان سے بھارت کو برآمدات میں صرف 5کروڑ50 لاکھ ڈالر کا اضافہ ہوا۔سال 2012میں پاک بھارت تجارت میں پاکستان کو درپیش تجارتی خسارے کی مالیت 1ارب 22کروڑ 50لاکھ ڈالر تھی جو سال 2013میں بڑھ کر 1ارب 47کروڑ 10لاکھ ڈالر تک پہنچ گئی۔ اقوام متحدہ کے انٹرنیشنل ٹریڈ سینٹر کی کماڈیٹی ٹریڈ ڈیٹا بیس کے اعدادوشمار کے مطابق سال 2013 میں بھارت سے پاکستان درآمد کی جانیوالی 5 سرفہرست مصنوعات میں کاٹن، فوڈ انڈسٹری کے ویسٹ، مویشیوں کا چارہ، آرگینک کیمکلز، سبزیاں و دیگر نباتات، پلاسٹک اور پلاسٹک آرٹیکلز شامل ہیں۔اس کے مقابلے میں پاکستان سے بھارت کو برآمد کی جانیوالی 5 سرفہرست مصنوعات میں مختلف اقسام کے پھل، بیج، سالٹ، سلفر، تعمیراتی پتھر، پلاسٹر، چونا، سیمنٹ، منرل فیولز، آئل ڈسٹیلیشن مصنوعات شامل ہیں۔ ماہرین کے مطابق پاکستان اور بھارت کے درمیان باہمی تجارت 25ارب ڈالرتک بڑھائے جانے کا پوٹینشل موجود ہے تاہم موجودہ تجارت اس پوٹینشل کے 10فیصد سے بھی کم تک محدود ہے، بھارت کی پاکستان سے مجموعی تجارت بھارت کی عالمی تجارت کا محض 0.55 فیصد ہے جبکہ پاکستان کی بھارت سے تجارت پاکستان کی عالمی تجارت کے 3.30 فیصد کے برابر ہے۔

مزید : کامرس


loading...