سانحہ لاہور جمہوری حکومت میں ریاستی دہشتگردی کا شرمناک مظاہرہ ہے ، محمودالحسن

سانحہ لاہور جمہوری حکومت میں ریاستی دہشتگردی کا شرمناک مظاہرہ ہے ، ...

لاہور(وقائع نگار)لاہور گلاس ایسوسی ایشن کے صدر محمودالحسن خان نے کہا ہے کہ لاہور پولیس نے ماڈل ٹاؤن میں نہتے مرد و خواتین پر فائرنگ کر کے سانحہ جلیانوالہ باغ کی یاد تازہ کر دی ہے یہ بات انہوں نے گزشتہ روز اپنے ایک بیان میں کہی ۔ انہوں نے کہاکہ جمہوری حکومت میں ریاستی دہشت گردی کا شرمناک مظاہرہ ہے کیونکہ پنجاب حکومت نے پولیس اور انتظامیہ کو شتر بے مہار بنا رکھا ہے ۔ اس واقعہ کے مرتکب تمام پولیس افسران اور اہلکاروں کے خلاف قتل کا مقدمہ دائر کیا جائے اگر رکاوٹیں ہٹانا مقصود تھا تو پہلے اعلیٰ پولیس افسران اور اعلیٰ شخصیات کے گھروں سے بھی رکاوٹیں ہٹائی جانی چاہئیں تھیں، ماڈل ٹاؤن میں عوام پر اصلی گولیاں چلانے کی بجائے انہیں منتشر کرنے کیلئے باقاعدہ وارننگ دی جاتی ، ربڑ کی گولیاں برسائی جاسکتی تھیں ، یاپھر واٹر کیننن، اور آنسو گیس کا استعمال بھی کیا جا سکتا تھا لیکن پولیس نے اپنی حدود کا تعین نہ کیا اور براہ راست عوام پر گولیاں برسانا شروع کردیں ۔ انہوں نے کہا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کی وجہ سے حکومت کی بدنامی کا باعث بننے والی پولیس میں موجود کالی بھیڑوں کو فوری طور پر محکمے سے نکال دینا چاہیے

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ کی رہائشگاہوں کی ناک کے نیچے ہونے والے اس افسوسناک واقعہ کی پرزور مذمت کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پولیس اور انتظامیہ کی دلوں میں جب تک جوابدہی اور احتسابی عمل سے گزرنے کا خوف پیدا نہں ہوگا اس طرح کے واقعات ہوتے رہیں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...