سیوریج کے پانی میں پولیو وائرس کی موجودگی کا انکشاف

سیوریج کے پانی میں پولیو وائرس کی موجودگی کا انکشاف
سیوریج کے پانی میں پولیو وائرس کی موجودگی کا انکشاف

  


بلوچستان( مانیٹرنگ ڈیسک) مختلف علاقوں میں سیوریج کے پانی میں پولیو وائرس کی موجودگی کا انکشاف ہوا ہے جس کے نتیجے میں200بچوں کے مفلوج ہونے کا خدشہ ہے۔ایک رپورٹ کے مطابق بلوچستان کے صوبے سے ڈیڑھ سال سے پولیو کا کوئی کیس رپورٹ نہیں ہوا۔ واضح رہے کہ انسداد پولیو کے حوالے سے کام کرنےوالے مختلف عالمی ادارے خیبر پختونخوا کے مختلف علاقوں کو پولیو کا گڑھ قرار دے چکے ہیں جن میں وزیرستان،فاٹا وغیر شامل ہیں۔ یاد رہے کہ بین الاقوامی طور پر انسداد پولیو کے لئے کام کرنے والے ادارے ٹیگ نے ان علاقوں سے پولیو پوری دنیا میں پھیلنے کا خدشہ ظاہر کرتے ہوئے ان علاقوں میں فوری طورپر پولیو مہم چلانے کی سفارش کی تھی۔ایسی صورتحال میں صوبہ بلوچستان سے سال بھر میں پولیو کا کوئی کیس نہ سامنے آنا انتہائی خوش آئند ہے لیکن سرکاری اداروں کو فوری طور پر سیویریج کے پانی میں پولیو وائرس کی موجودگی کی خبروں کا نوٹس لیتے ہوئے ایسے اقدامات کرنے ہوں گے جس سے بلوچستان کا صوبہ پولیو سے متاثرہ علاقوں میں شامل ہونے سے بچ سکے۔

مزید : بلوچستان /اہم خبریں


loading...