بھارتی حکومت کا عمر بھر کے لئے مفت دوائیاں دینے کا منصوبہ

بھارتی حکومت کا عمر بھر کے لئے مفت دوائیاں دینے کا منصوبہ
بھارتی حکومت کا عمر بھر کے لئے مفت دوائیاں دینے کا منصوبہ

  


نیو دہلی (بیورورپورٹ ) نریندر مودی حکومت نے عوام کے ساتھ تعلقات خوشگوار بنانے کے لئے سماجی بہبود کے سلسلے میں صحت عامہ (ہیلتھ کیئر) کا ایک پروجیکٹ شروع کردیا۔ ابتدائی طور پر وزارت ِصحت بھارت کے تمام عوام تک 50 اہم ادویات کی مفت فراہمی کا ارادہ رکھتی ہے۔ وزیرِِ صحت ہارش وردھان نے بتایا کہ 50بنیادی اہمیت کی ادویات اکثر لوگوں کی صحت کے حوالے سے75فی صد ضروریات پوری کریں گی اور ہم ہر ایک شخص تک ان ادویات کی پیدائش سے موت تک فراہمی یقینی بنانے کا منصوبہ رکھتے ہیں۔ حفظانِ صحت کا یہ پروگرام کئی مرحلوں میں مکمل ہو گا۔ شروع میں بھارت کے بعض مخصوص ہسپتالوں میں یہ سہولت فراہم کی جائے گی۔ ڈاکٹر وردھان کا مزید کہنا ہے کہ اس پروگرام میں ادویات کی جلد فراہمی اور معیار کو خصوصی طور پر مدنظر رکھا جائے گا۔ خیال رہے کہ ڈاکٹر وردھان نے اس سے پہلے 1993سے 1998 کے دوران وزیرِ صحت کی حیثیت سے عالمی ادارہ صحت (WHO)کے ”اہم ادویات کی فراہمی کے پروگرام“ کی طرز پر ”دہلی ماڈل“ نامی پروگرام کا نفاذ کرچکے ہیں، جس کے تحت بھارتیوں کی صحت کے حوالے سے اہم ادویات کی فہرست بنائی گئی تھی۔ ”دہلی ماڈل“ کو 12ریاستوں میں عالمی ادارہ صحت کے لئے کیس اسٹڈی کے طور پرنافذ کیا گیا تھا۔ اس ضمن میں فارماکالوجی کے پروفیسر اور ادویات کی فہرست بنانے والی کمیٹی کے سربراہ رنجیت رائے چوہدری کا کہنا ہے کہ صحت پر اُٹھنے والے60 صد اخراجات کا سبب دو چیزیں ہیں ایک ادویات کی قیمتیں اور دوسرے تشخیص کے ا خراجات ہیں۔ اس پروگرام کے تحت ادویات کے طریقِ استعمال کے ساتھ بہت کم خرچ میں مریض تک فراہمی کے ان اخراجات میں کمی لائے گی۔

مزید : تعلیم و صحت


loading...