وزیراعلی پنجاب سانحہ ماڈل ٹاؤن کی ذ مہ داری قبول کر کے مستعفی ہو جائیں ، عمران خان

وزیراعلی پنجاب سانحہ ماڈل ٹاؤن کی ذ مہ داری قبول کر کے مستعفی ہو جائیں ، ...

اسلام آباد(اے این این)پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے وزیراعلی پنجاب سے ماڈل ٹاؤن لاہور میں پولیس کے ہاتھوں 11شہریوں کی ہلاکت اور 83افرادکے زخموں کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے مستعفی ہونے کا مطالبہ کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ پنجاب کے آئی جی کے عجلت میں کیے گئے تبادلے سے معاملے میں شہباز شریف کی شمولیت واضح ہوتی ہے چنانچہ صوبے کے وزیراعلی کے طور پر انہیں قتل عام کی ذمہ داری قبول کرنی چاہیے۔ اسلام آباد سے جاری بیان میں ان کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ نواز نے پولیس کو نجی ملیشیا میں تبدیل کر رکھا ہے اور شہباز شریف کا سابق دور حکومت بھی پولیس مقابلوں اور ماورائے عدالت قتل کی وارداتوں سے بھرپور رہا، جس سے صوبے کے عوام کی نظر میں پولیس کی ساکھ کو شدید دھچکا پہنچا ہے۔ ان کے مطابق صوبے میں پولیس شہریوں کو تحفظ فراہم کرنے کی بجائے عام شہریوں کو ہراساں کرنے کا موجب بن رہی ہے۔ اپنے بیان میں چیئرمین تحریک انصاف نے واضح کیا کہ وزیراعلی پنجاب مستعفی ہونے کی بجائے اپنے وزیراعظم بھائی کی معاونت سے ماڈل ٹاؤن میں پولیس کی جانب سے پاکستان عوامی تحریک پر ظلم وبربریت کے مناظر نشر کرنے کی پاداش میں اے آر وائے نیوز کو پیمرا کے ذریعے بند کر کے انتقامی کارروائی کا نشانہ بنا رہے ہیں۔ مذکورہ اقدام کو شریف خاندان کے غیر جمہورے رویے کی واضح مثال قرار دیتے ہوئے چیئرمین تحریک انصاف نے کہا اے آر وائے کی بندش کے ذریعے مسلم لیگ نواز نے اپنی مخالفت میں بلند ہونے والی سیاسی جماعت کی آواز گل کرنے کی کوشش کی ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ جیو نیوز کی جانب سے مسلسل آٹھ گھنٹوں تک آئی ایس آئی اور اس کے سربراہ کی بغیر کسی ثبوت کے کردار کشی کو مسلم لیگ نواز اور پنجاب پولیس کی سفاکیت کی حقائق پر مبنی نشریات سے تشبہیہ دینا اور دونوں واقعات پر مساوی سلوک نہ صرف طاقت اور اختیارات کا غلط استعمال ہے بلکہ انصاف کا بھی قتل عام ہے۔ ان کے مطابق اے آر وائے کی بندش کا فیصلہ کرتے وقت مذکورہ ٹی وی چینل کی جانب سے جیو اور اس کے مالک کے خلاف تنقید کی پاداش میں انتقامی کارروائی سے گریز نہیں کیا گیا جبکہ حکومت نے جیو پر آئی ایس آئی کے خلاف 8گھنٹوں تک چلائی جانے والی مہم پر مسلسل آنکھیں بند رکھیں۔ اپنے بیان میں چیئرمین تحریک انصاف نے کہا کہ احتجاجی جلسوں اور تحاریک کے ذریعے شریف خاندان کے غیر جمہوری اور انتقام پر مبنی رویوں کو قوم کے سامنے اس وقت تک بے نقاب کرتے رہیں گے جب تک مسلم لیگ کے قائدین اپنے رویے پر توبہ نہیں کرتے

مزید : صفحہ آخر


loading...