اللہ اور عوام کو جوابدہ ہوں ،انصاف کی با لا دستی کیلئے آخری حد تک جاؤں گا،شہباز شریف

اللہ اور عوام کو جوابدہ ہوں ،انصاف کی با لا دستی کیلئے آخری حد تک جاؤں ...

لاہور(نمائندہ خصوصی ،سٹاف رپورٹر) وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ لاہور میں پیش آنے والے افسوسناک واقعہ پر میرا دل ابھی تک رنجیدہ اور غمزدہ ہے۔واقعہ میں قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر دلی دکھ اورافسوس ہے،سوگوار خاندانوں کے غم میں برابرکے شریک ہیں ۔واقعہ میں انصاف اور قانون کی بالادستی کیلئے تمام اقدامات اٹھائے جائیں گے۔ عدالتی کمیشن کی تحقیقات کے نتیجے میں حقائق سامنے آئیں گے جن سے عوام کو آگاہ کیا جائے گا اورذمہ داروں کو قانون کے مطابق گرفت میں لائیں گے۔میں اللہ اور صوبے کے 10 کروڑ عوام کو جوابدہ ہوں۔ انصاف کے تقاضے ہر قیمت پر پورے کیے جائیں گے۔انہوں نے ان خیالات کا اظہار یہاں اراکین اسمبلی سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے کہا کہ انصاف کی فراہمی اور قانون کی بالادستی میں کوئی رکاوٹ برداشت نہیں کروں گا۔ میں ہمیشہ کمزور اور طاقتور کے درمیان آہنی دیوار بن کر کھڑا رہا ہوں اورلاہور کے افسوسناک واقعہ میں بھی مظلوم خاندانوں کے ساتھ سیسہ پلائی ہوئی دیوار بن کر کھڑا ہوں گا۔انہوں نے کہا کہ لاشوں کی سیاست کرنے والے اپنے مذموم عزائم میں کبھی کامیاب نہیں ہوسکتے،ملک میں جب بھی بحران آئے اورعوام قدرتی آفات سے دوچار ہوئے تو لاشوں کی سیاست کرنے والے سیاستدان اپنے عوام کے ساتھ کھڑا ہونے کے بجائے بیرون ممالک برفانی فضاؤں کا لطف اٹھاتے رہے۔ پاکستان کے عوام ان کے اس کردار سے بخوبی آگاہ ہیں جبکہ میں ایک خطر ناک مرض کے باوجود خادم پنجاب کے طورپر مصیبت میں گھرے لوگوں کے ساتھ کھڑارہا اوران کی مدد کے لئے صوبے کے کونے کونے میں پہنچا۔انہوں نے کہا کہ انصاف اور حق کی بالادستی کیلئے کڑے فیصلے کرنے پڑتے ہیں۔ دنیا میں وہی قومیں آگے بڑھتی ہیں جن کی قیادت مشکل حالات میں کڑے فیصلے کرنے کی صلاحیت رکھتی ہوں۔انہوں نے کہا کہ صرف انصاف کا ہونا ہی کافی نہیں بلکہ انصاف ہوتا ہوا نظر بھی آنا چاہیئے۔میرا ماضی گواہ ہے کہ میں نے کبھی بھی لاٹھی گولی کی سیاست نہیں کی بلکہ شرافت اور خدمت کو اپنا اوڑھنا بچھونا بنایا ہے۔مجھ پر الزام لگانے والے وہ عناصر ہیں لاشوں پر سیاست کرنا چاہتے ہیں اورمگر مچھ کے آنسو بہانے والے یہ عناصر 2007ء میں مکا لہرانے والوں کے ساتھ اس وقت اسلام آباد میں جشن منارہے تھے جب کراچی میں 42بے گناہ افراد کو قتل کیا گیا۔6سالہ دور میں عوام کی خدمت کو عبادت سمجھا ہے اور عوام کی خدمت کے لئے کوئی کسر اٹھا نہیں رکھی اوراب بھی اس افسوسناک واقعہ میں مظلوم خاندانوں کو انصاف دلا کر دم لوں گا۔حق اورانصاف کی بالادستی کے لئے ہر اقدام اٹھایا جائے گااورکسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کروں گا۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ پاکستان کی مسلح افواج ملک کی بقا کی جنگ لڑ رہی ہیں اور پوری قوم کو پاک افواج کی لازوال قربانیوں پر فخر ہے۔ اس وقت پاکستان کا ہر بچہ ، جوان، بزرگ اور مائیں بہنیں اپنی افواج کی کامیابی کیلئے دعاگو ہیں۔ پاک فوج نے امتحان کی ہر گھڑی میں شجاعت اور عزیمت کی لازوال مثالیں پیش کی ہیں۔ میں پاک فوج کے شہداء اور غازیوں کو سلیوٹ کرتا ہوں۔وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان اورچین کے مابین دوستی کا مضبوط رشتہ سود مند معاشی روابط میں بدل چکا ہے ۔دونوں ممالک کے مابین وقت گزرنے کے ساتھ بڑھتے ہوئے معاشی وتجارتی تعاون سے عوام ایک دوسرے کے قریب سے قریب تر آرہے ہیں۔پاک چین دوستی آزمائش کی ہر گھڑی پر پورا اتری ہے ۔چین کی حکومت اور قیادت نے ہمیشہ پاکستان اوراس کے عوام کا بھر پور ساتھ دیا ہے ۔پاک چین دوستی ہمالیہ سے بلند،سمندر سے گہری،شہد سے میٹھی اور فولاد سے زیادہ مضبوط ہے۔پاکستان کے عوام کو چین کی لازوال دوستی پر فخر ہے ۔وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے ان خیالات کا اظہار چین کے پرنٹ اورالیکٹرانک میڈیا کے نمائندہ وفد سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ صوبائی وزیر قانون و تعلیم رانا مشہود احمد، پارلیمانی سیکرٹری برائے اطلاعات رانا محمد ارشد،پریس سیکرٹری شعیب بن عزیز اور پولیٹیکل سیکرٹری افضال بھٹی بھی اس موقع پر موجود تھے۔وزیراعلیٰ محمدشہباز شریف نے چین کے صحافیوں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ چین نے پاکستان کے لئے7برس کے دوران32ارب ڈالر کے سرمایہ کاری پیکیج کا اعلان کر کے مخلص دوست ہونے کا ثبوت دیا ہے اوریہ پیکیج پاکستان کے عوام کے لئے چین کی قیادت کا شاندار تحفہ ہے۔،اب یہ ہماری ذمہ داری ہے کہ اس سرمایہ کاری پیکیج سے پوری طرح استفادہ کریں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کو توانائی بحران سمیت کئی ایک چیلنجز کا سامنا ہے ،توانائی کی کمی کے مسئلے نے صنعتکاری کے عمل کو بری طرح متاثر کیا ہے۔ روزگار کے مواقع بڑھانے کے لئے صنعتوں کا فروغ نہایت اہمیت کا حامل ہے اورصنعتوں کو چلانے کے لئے توانائی کی ضرورت ہے ۔ حکومت توانائی بحران سے جلد از جلد چھٹکارا حاصل کرنے کیلئے ہر ضروری قدم اٹھارہی ہے ۔چین کی حکومت کی جانب سے اعلان کردہ سرمایہ کاری پیکیج کے تحت پاکستان میں توانائی کے 20ہزا ر میگاواٹ کے منصوبے لگائے جائیں گے جس سے نہ صرف عوام کو لوڈ شیڈنگ کے عذاب سے نجات ملے گی بلکہ ملک ترقی اورخوشحالی کی را ہ پر گامزن ہوگا۔انہوں نے کہاکہ چین کی کمپنی ڈونگ فونگ کے تعاون سے نندی پور پاور پراجیکٹ کو7ماہ کی ریکارڈ مدت میں مکمل کیا گیا ہے اور اس سے 100میگاواٹ بجلی کا حصول شروع ہوگیا ہے۔ رواں برس کے آخر تک نندی پور پاور پراجیکٹ سے 425 میگاواٹ بجلی نیشنل گرڈ میں شامل ہوجائے گی۔انہوں نے کہا کہ بہاولپور میں سولر پارک کے بڑے منصوبے پر تیزرفتاری سے کام جاری ہے ۔پنجاب حکومت نے اپنے وسائل سے ایک ہزار میگاواٹ سولر منصوبے لگانے کی منصوبہ بندی کی ہے ۔100میگاواٹ کا سولر منصوبہ رواں سال کے آخر تک مکمل ہوجائے گا۔انہوں نے کہا کہ توانائی کے ساتھ انفراسٹرکچر ،ٹرانسپورٹ اوردیگر شعبوں میں بھی چین کا تعاون لائق تحسین ہے۔چین کے ساتھ لاہور میں اورنج لائن میٹروٹرین چلانے کا معاہدہ کیا گیا ہے اور اس منصوبے پر 1.7ارب ڈالر لاگت آئے گی،منصوبے کو تیزی سے مکمل کریں گے۔چین کے وفد کے اراکین نے اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف کی قیادت میں پنجاب تیزی سے ترقی کررہا ہے ۔چین اور پاکستان کے مابین دوستی ہر گزرتے لمحے کے ساتھ مضبوط سے مضبوط تر ہورہی ہے۔دونوں ممالک کے مابین تجارتی تعاون فروغ پارہا ہے ۔

مزید : صفحہ اول


loading...