امریکہ نے پاکستان کی امداد میں کٹو تی کردی

امریکہ نے پاکستان کی امداد میں کٹو تی کردی
امریکہ نے پاکستان کی امداد میں کٹو تی کردی

  


واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ نے پاکستان کیلئے آئندہ سال کیلئے مجوزہ 1.03 ارب ڈالر کی امداد میں 65.8 ملین ڈالر کی کمی کردی، کانگریس کی ایپروپری ایٹ کمیٹی نے کٹوتی کے بعد 959.7 ملین ڈالر کی امداد کی منظوری دیدی اور اس بات کی یقین دہانی مانگی کہ پاکستان کو دی جانےوالی امداد کا ایک روپیہ بھی پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے پر خرچ نہ ہو، کمیٹی نے وزیر خارجہ جان کیری پر زور دیا کہ وہ 2011ءمیں لاہور میں اغواءکئے گئے امریکی شہری کی بازیابی کیلئے کوششیں تیز کریں۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق کانگریس کی ایک اہم کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں محکمہ خارجہ کے 2015ءکے 48.28 ارب ڈالر کے بجٹ کی منظوری دی تاہم کانگریس کی طاقتور کمیٹی نے امریکی صدر اوباما کی جانب سے پاکستان کیلئے 1.03 ارب ڈالر کی امداد کی منظوری کی تجویز مسترد کرتے ہوئے مجوزہ امداد 65.8 ملین ڈالر کی کٹوتی کرلی، جس کے بعد 959.7 ملین ڈالر کی مجموعی امداد منظور کی گئی۔ محکمہ خارجہ کے مطابق اس میں سے 816 ملین ڈالر سے زائد کی رقم معاونت پروگرام کا حصہ ہے، بل میں پولیو سے تحفظ کے پروگرام کیلئے 59 ملین ڈالر کے فنڈز کا اضافہ کیا گیا ہے جس میں پاکستان اور افغانستان کی اس بیماری کو ختم کرنے کیلئے کثیر الطرفہ مہم کے 7.5 ملین ڈالر بھی شامل ہیں، 9 ملین سے زائد کی رقم صدر اوباما کی درخواست پر بڑھائی گئی ہے۔ کمیٹی نے وزیر خارجہ سے درخواست کی کہ وہ پاکستان اور افغانستان خصوصی نمائندوں کے دفاتر بھی سمیٹیں، کانگریس کمیٹی نے پاکستان میں جاری پروگراموں کے حوالے سے ہدایت کی کہ بےروزگاری، ناخواندگی اور مختلف برادریوں کے درمیان عدم اطمینان کے اظہار پر توجہ دی جائے۔ کمیٹی نے محکمہ خارجہ سے کہا کہ وہ اس بات کو یقینی بنائے کہ امریکہ کی امداد رقم پاک ایران گیس پائپ لائن منسوبے کیلئے استعمال نہ ہو۔

مزید : قومی /اہم خبریں


loading...