سا نحہ لاہور :پولیس نے توقیر شاہ کے پول کھول دیئے

سا نحہ لاہور :پولیس نے توقیر شاہ کے پول کھول دیئے
سا نحہ لاہور :پولیس نے توقیر شاہ کے پول کھول دیئے

  


لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) پولیس نے سانحہ ماڈل ٹاﺅن میں قربانی کا بکرا بننے کے بجائے ڈاکٹر توقیر شاہ کی ہدایات پر مبنی کال ڈیٹا وزیراعلیٰ پنجاب کو پیش کردیا جس پر ڈاکٹر توقیر کو وزیراعلیٰ کے پرنسپل سیکرٹری کے عہدے سے فوری طور پر برطرف کیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق ماڈل ٹاﺅن آپریشن میں موجود پولیس افسران سے ڈاکٹر توقیر شاہ کا مسلسل رابطہ رہا اور وہ برائے راست آپریشن کے بارے میں ہدایات جاری کرتے رہے۔تحقیقات کے دوران سانحہ کی سنگینی کے باعث جب پولیس پر براہ راست ساری ذمہ داری آنے لگی تو پولیس افسر قربانی کا بکرا بننے کے بجائے پھٹ پڑے اور وزیراعلیٰ کو ٹیلی فون کالز کے ریکارڈ سمیت ڈاکٹر توقیر کے آپریشن میں مداخلت کے تمام ثبوت پیش کردئیے جس کے مطابق توقیر شاہ کی آپریشن میں براہ راست مداخلت ثابت ہوگئی، وہ متعلقہ پولیس افسران سے نہ صرف رابطے میں رہے بلکہ ان کو ہدایات بھی جاری کرتے رہے۔ ذرائع نے بتایا کہ وزیراعلیٰ کو مہیا کیاگیا موبائل کال کا ریکارڈ ہی ڈاکٹر توقیر کے او ایس ڈی بننے کا سبب بنا ہے، وزیراعلیٰ ڈاکٹر توقیر کے آپریشن مین شریک پولیس افسران سے براہ راست رابطے پر سخت ناراض ہیںاور ان کے 15 سال سے ساتھ کام کرنے کے باعث شہباز شریف ان پر اندھا اعتماد کرتے تھے۔

مزید : لاہور


loading...