شمالی وزیرستان سے نقل مکانی،موقع اچھا ہے قبائلیوں کو پولیو کے قطرے پلا دو:اقوام متحدہ

شمالی وزیرستان سے نقل مکانی،موقع اچھا ہے قبائلیوں کو پولیو کے قطرے پلا ...
 شمالی وزیرستان سے نقل مکانی،موقع اچھا ہے قبائلیوں کو پولیو کے قطرے پلا دو:اقوام متحدہ

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) قبائلی علاقے کی ڈیزاسٹر مینیجمنٹ اتھارٹی نے بتایا ہے کہ شمالی وزیرستان میں جاری فوجی آپریشن” ضرب عضب“ کے باعث نقل مکانی کرنے والے افراد میں ڈیڑھ لاکھ بچے ہیں جس پر عالمی ادارہ صحت نے کہا ہے کہ یہ بھرپور موقع ہے کہ اِن تمام کو پولیو سے بچاﺅ کے قطرے پلائے جائیں۔فاٹا ڈیزاسٹر مینیجمنٹ اتھارٹی کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر محمد حسیب خان نے ایک غیر ملکی خبررساں ایجنسی کو بتایا کہ پناہ گزینوں کی کل تعداد میں سے بیالیس فیصد تعداد بچوں کی ہے جبکہ 31 فیصد خواتین ہیں۔عالمی ادارہ صحت کے مطابق پاکستان میں پولیو سے متاثر ہونے والے بچوں کی سب سے بڑی تعداد شمالی وزیرستان میں ہے۔واضح رہے کہ شمالی وزیرستان میں جون 2012 سے پولیو مہم معطل کردی گئی تھی۔عالمی ادارہ صحت نے متنبہ کیا ہے کہ شمالی وزیرستان میں فوجی آپریشن کے آغاز کے باعث بڑی تعداد میں نقل مکانی ہو رہی ہے اور اس نقل مکانی کے وجہ سے ملک کے دیگر علاقوں میں بھی پولیو وائرس پھیلنے کا خدشہ ہے۔پاکستان میں عالمی ادارہ صحت کے پولیو کوآرڈینیٹر ڈاکٹر زبیر مفتی نے غیر ملکی خبر رساں ایجنسی سے بات کرتے ہوئے کہا ”دو سال سے زیادہ عرصہ ہوگیا ہے کہ شمالی وزیرستان میں پولیو سے بچاﺅ کے قطرے نہیں پلائے جاسکے۔ اب جبکہ یہ آبادی موجودہ صورتحال کے پیش نظر اپنے علاقوں سے نقل مکانی کرکے باہر آئی ہے تو بھرپور موقع ہے کہ اِن افراد کو پولیو سے بچاﺅ کے قطرے پلائے جائیں“۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں


loading...