ہاکی چیمپئنز ٹرافی کو ختم کرنا افسوس ناک ہے،شہنازشیخ

ہاکی چیمپئنز ٹرافی کو ختم کرنا افسوس ناک ہے،شہنازشیخ

  

راولپنڈی(اے پی پی) پاکستانی ہاکی لیجنڈ شہناز شیخ نے کہا ہے کہ چیمپئنز ٹرافی میں روایتی حریف بھارت کے خلاف میچ دلچسپ ہوگا، جو ٹیم اچھا کھیلے گی وہ جیتے گی، ہاکی لیگ اور لوکل ٹورنامنٹس کے انعقاد پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ شہناز شیخ نے کہا کہ چیمپئنز ٹرافی میں دنیا کی بہترین ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں۔ہالینڈ میں بھی پریکٹس میچز کے علاوہ تربیتی کیمپ لگایا گیا، توقع ہے کہ ٹیم اچھے نتائج دے گی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کو اٹیکنگ ہاکی کھیلنی چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ ماڈرن ہاکی میں گول کیپر کا کردار بہت اہم ہوتا ہے، اس کے علاوہ پنلٹی کارنر بھی انتہائی اہم ہے۔ شہناز شیخ نے کہا کہ فیڈریشن کی طرف سے یہ بیان افسوس ناک ہے کہ چیمپئنز ٹرافی ایشین گیمز کی تیاری کیلئے ہے، انٹرنیشنل ایونٹس تیاری کیلئے نہیں ہوتے بلکہ ان ٹورنامنٹس میں بھرپور تیاری کے ساتھ شرکت کی جاتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ منفی بیانات سے کھلاڑیوں کا بھی مورال ڈاؤن ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں کے ایشین گیمز اولمپک گیمز کی کوالیفکیشن کیلئے بڑا ٹورنامنٹ ہے۔ ہاکی کی بہتری کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ سکول اور کالج میں ہاکی بالکل ختم ہو گئی ہے، فیڈریشن نے بھی لوکل ٹورنامنٹس کے بجائے اپنی تمام تر توجہ انٹرنیشنل ایونٹس پر رکھی ہوئی ہے جس کی وجہ سے نیا ٹیلنٹ سامنے نہیں آرہا۔ انہوں نے کہا کہ ہاکی کی بہتری کیلئے فیڈریشن کو غیر معمولی اقدامات کرنا ہوں گے۔ قومی سطح پر کم از کم 6 اکیڈیمز بنائی جائیں جنہیں میرٹ کی بنیاد پر چلایا جائے۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -