وزارت مذہبی امور کو سرکاری حج سکیم کا فلائٹ شیڈول تیار کرنے میں مشکلات

وزارت مذہبی امور کو سرکاری حج سکیم کا فلائٹ شیڈول تیار کرنے میں مشکلات

  

لاہور(میاں اشفاق انجم سے)ائیر لائنز کی بلیک میلنگ جاری،وزارت مذہبی امور کو سرکاری حج سکیم کا فلائٹ شیڈول تیار کرنے میں سخت مشکلات کا سامنا،حج آپریشن 2018ء شروع ہونے میں 24دن باقی، پرائیویٹ حج سکیم کی 148کمپنیوں کا ای حج سسٹم آن نہ ہوسکا،سعودی عرب کے ساتھ حج2018ء کا سائن ہونے والا سرکاری سکیم67 فیصد ،پرائیویٹ سکیم33فیصد کا ایم او یو درد سر بن گیا،ایم او یو کے مطابق پاکستان سے سرکاری سکیم کے ایک لاکھ 19ہزار 800افراد جبکہ پرائیویٹ سکیم میں 64ہزار افراد نے جانا تھا سپریم کورٹ کا فیصلہ آنے کے بعد سرکاری سکیم کے 60فیصد کے حساب سے ایک لاکھ 7ہزار 526افراد اور پرائیویٹ سکیم کے تحت 76ہزار 184افراد جائیں گے،سپریم کورٹ کے نئے احکامات کے بعد وزارت کی طرف سے سعودی عرب بھیجی گئی فہرستوں پر تاحال عمل درآمد نہیں ہو سکا 10شوال کو چھٹیاں ختم ہونے کا کہا جا رہا ہے ،تین ائیر لائنز کا حج آپریشن کا ایم او یو سائن ہو چکا ہے ایک ائیر لائنز ابھی تک کرایہ بڑھانے کی ضد پر قائم ہے جس کی وجہ سے سرکاری حج سکیم کا فلائٹ شیڈول التوا کا شکار ہے دوسری طرف سپریم کورٹ کے فیصلے پر عمل درآمد نہ ہونے کی وجہ سے کوئٹہ،کراچی اور ملتان کی148کے قریب کمپنیوں کا رجسٹریشن ای حج میں کوٹہ شو نہیں ہو رہا جس کی وجہ سے ڈیڑھ سو کے قریب کمپنیاں سخت مشکلات کا شکار ہیں کب ای سسٹم آن ہو گا ان کمپنیوں نے اپنا پروفائل فیڈ کرنا ہے، کب حج کی بکنگ کریں گے، سعودی عرب کب جائیں گے، منظم کارڈ کیسے بنائیں گے اتنے کم وقت میں اتنے زیادہ کام کیسے ممکن ہوں گے وزارت کے نا تجربہ کار افسر کچھ بتانے میں قاصر ہیں ۔

مشکلات

مزید :

صفحہ آخر -