ہائیکورٹ نے پیپروں کو مارکنگ کیلئے آزادکشمیر بھجوانے کیخلاف درخواست پر صوبہ بھر کے تعلیمی بورڈز کے چیئرمینوں سے وضاحت طلب کرلی

ہائیکورٹ نے پیپروں کو مارکنگ کیلئے آزادکشمیر بھجوانے کیخلاف درخواست پر ...

  

ملتان (خبر نگار خصوصی)ہائیکورٹ ملتان بینچ نے تعلیمی بورڈ کی جانب سے پیپروں کو مارکنگ کیلئے بیرون اضلاع آزاد کشمیر بھجوانے کے خلاف درخواست پر صوبہ بھر کے تعلیمی بورڈز کے چیئرمینوں (بقیہ نمبر23صفحہ12پر )

سے وضا حت طلب کرلی ہے۔ قبل ازیں فاضل عدالت میں سہیل اے خان نے درخواست دائر کرکے مؤقف اختیار کیا تھا کہ 1995 میں مختلف بورڈز کے میٹرک و انٹرمیڈیٹ کے امتحانات کی جوابی کاپیاں مارکنگ کیلئے کشمیر سمیت دیگر اضلاع میں بھجوانے کیلئے بورڈ کے چیئرمینوں کی میٹنگ میں فیصلہ کیا گیا اور مذکورہ فیصلے کو کسی قانونی شق اور قانون سازی کے بغیر آج تک جاری رکھے ہوئے ہیں جس پر ہر سال 50 کروڑ روپے اخراجات کے علاوہ معیار اور تعلیمی رجحان کے حوالے سے غیر مساوی سلوک کیا جاتا ہے جسکی وجہ سے جنوبی پنجاب کے اضلاع کے طلبا ہمیشہ کم نمبر حاصل کرتے ہیں یہی وجہ ہے کہ پنجاب بھر میں اپرپنجاب کے طلبا ء ہی پوزیشن حاصل کرتے ہیں۔ فاضل عدالت نے نوٹس جاری کرتے ہوئے سماعت 26 جون مقرر کی ہے۔

مارکنگ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -