اپیلٹ ٹربیونل میں اپیلوں کی سماعت کے لئے25جون کی تاریخ مقرر

اپیلٹ ٹربیونل میں اپیلوں کی سماعت کے لئے25جون کی تاریخ مقرر

  

پشاور(نیوزرپورٹر)25جولائی کوہونے والے عام انتخابات کے لئے ریٹرننگ افسروں کی جانب سے کاغذات نامزدگی کی منظوری اوراخراج کے خلاف اپیلٹ ٹربیونل میں اپیلوں کی سماعت کے لئے25جون کی تاریخ مقرر کردی گئی ہے پشاورہائی کورٹ کی پرنسپل سیٹ پرجسٹس مسرت ہلالی اورجسٹس سیدافسرشاہ ان اپیلوں کی سماعت کریں گے گذشتہ روز ایک درجن سے زائد اپیلیں پشاورہائی کورٹ میں دائرکی گئیں جن میں پی کے 70 پھندو سے پی ٹی آئی کے ممبر کی جانب سے اپیل دائر کی گئی ٗ این اے 21 مردان سے آزاد امیدوار نے کاغذات مسترد ہونے پر اپیل دائرکی پی کے 74سے آزاد امیدوارعبدالرحیم نے کاغذات مسترد ہونے کے خلاف اپیل دائرکی ٗاین اے 21 سے نواب زادہ ارسلاخان ہوتی نے بھی اپیلٹ کورٹ میں اپیل کی جن کے کاغذات ریٹرننگ افسرنے دوہری شہریت کی بناء مسترد کردئیے تھے ٗ این اے 46 کے امیدوار فضل ربی نے بھی اپیلٹ ٹربیونل میں اپیل دائر کی ٗ فضل ربی کا تعلق حلقہ این اے 45 سے تھا مگر کاغذات این اے 46 حلقے کے لیے تھےٗ پی کے 65 پبی سے الیکشن میں حصہ لینے والے داؤد خان خٹک کے کاغذات نامزدگی مسترد کرنے کے لئے اپیل دائرکی گئی درخواست گذار ملک شمس خان نے اپیل میں موقف اختیار کیاہے کہ داؤدخان خٹک نے ان کی اراضی خریدی تھی مگر پندرہ سال گذرنے کے باوجود پیسے ادا نہیں کیے گئےٗ پی کے 66 سیف اللہ نے ریٹرننگ افسر فیصلے کے خلاف اپیل دائر کی پی کے 83وہنگو سے گل ثنا دین کے پی کے 83 ہنگو کے تجویز اور تائید جانچ پڑتال کے عمل میں حاضر نہ ہوے گل ثنا کے کاغذات بھی مسترد ہوئے تھے اسی طرح پی کے 46سے محمد علی ترکئی کاغذات نامزدگی مسترد کرنے کے خلاف اپیل دائرکی ہے عرفان اللہ پی کے 71ایف آر کوہاٹ نے بھی اپیل دائر کیٗ عرفان اللہ اپنے حلقے کا ووٹر نہ ہونے کے باعث کاغذات مسترد ہوئے تھے پی کے 80 کوہاٹ فیاض امیدوار کی جانب سے اپیل دائر کی گئی ہے جس میں موقف اختیارکیاگیاہے کہ حلقہ 82 کی بجاے میرا نام حلقہ 80 میں نام ایا ہے، پشاورہائی کورٹ کے متعلقہ اپیلٹ ٹربیونلزاپیلوں کی سماعت 25جون کوکریں گے ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -