چکوال،این اے64میں پی ٹی آئی کی بھرپورپیش قدمی

چکوال،این اے64میں پی ٹی آئی کی بھرپورپیش قدمی

  

چکوال(ڈسٹرکٹ رپورٹر)حلقہ این اے64اور پی پی21اور پی پی22پر پاکستان تحریک انصاف کی بھرپور پیش قدمی نے صورتحال یکسر بدل دی ہے۔ جمعرات کے روز پہلے چوآسیدنشاہ میں مسلم لیگ ن کی بڑی وکٹ چیئرمین یونین کونسل لہڑ سلطان پور راجہ ساجد اقبال تحصیل چوآسیدنشاہ مسلم لیگ ن کی صدارت سے مستعفی ہوئے اور پی ٹی آئی کے امیدواروں سردار غلام عباس اور راجہ طارق افضل کالس کی حمایت کا اعلان کردیا۔ اُدھر علاقہ کہون میں پیر وقار حسین کرولی نے اپنے ساتھیوں کا بھرپور اجتماع کرتے ہوئے حلقہ این اے64پر سردار غلام عباس اور پی پی22پر راجہ طارق افضل کالس کی حمایت کا اعلان کردیا۔ مسلم لیگ ن کا ابھی تک سابق ایم پی اے سردار ذوالفقار علی خان کیساتھ معاملات طے نہیں پا سکے ہیں کہ حلقہ این اے64پر مسلم لیگ ن کی طرف سے میجر (ر) طاہر اقبال اور سردار ذوالفقار علی خان دلہہ کے درمیان میں کون الیکشن لڑے گا۔ اُدھردو قومی اور چار صوبائی اسمبلی کی نشستوں پر 93امیدواروں کی موجودگی بذات خود ایک بہت بڑا سوالیہ نشان ہے اور یہی وجہ ہے کہ آنے والے تین چار دنوں میں دو بڑے کٹے کھلنے کے امکانات روشن ہو گئے ہیں۔مسلم لیگ ن کے سردار ذوالفقار علی خان دلہہ مقامی پارلیمنٹرینز کی تمام تر یقین دہانیوں کے باوجود ملک سلیم اقبال سے مطمئن نہیں ہے کیونکہ ملک سلیم اقبال نے حلقہ پی پی 23میں ملک فلک شیر اعوان کو مسلم لیگی ٹکٹ کی یقین دہانی کرا رکھی ہے۔جبکہ معتبر حلقوں نے اس بات کی بھی تصدیق کی ہے کہ سردار فیض ٹمن کو بھی حلقہ این اے 65میں ملک سلیم اقبال کی حمایت حاصل ہے۔بحر حال تحصیل تلہ گنگ اور لاوہ میں اس منافقانہ طرز عمل سے مسلم لیگ ن کو نقصان پہنچنے کا خدشہ ہے۔دوسری طرف پاکستان تحریک انصاف کے فواد چوہدری نے بھی ایک نیا کٹا کھول دیا ہے انکے بقول ہماری مسلم لیگ ق کے ساتھ صرف حلقہ این اے 65پر پرویز الٰہی کے ساتھ ایڈجسٹمنٹ ہے۔باقی حلقہ 23اور 24پر پی ٹی آئی اپنے امیدوار نامزد کریگا۔اس کا مطلب یہ ہے کہ حافظ عمار یاسر کی جگہ حلقہ پی پی 24پر کرنل سلطان سرخرو کو ٹکٹ ملنے کے امکانات روشن ہو گئے ہیں۔حافظ عمار یاسر نے اپنی طوفانی انتخابی مہم بھی شروع کر رکھی ہے۔اور کچھ حلقے انہیں پی پی 23سے الیکشن لڑنے کا مشورہ دے رہے ہیں۔اگر پی ٹی آئی کے ساتھ مسلم لیگ ن کی ایڈجسٹمنٹ نہ ہوئی تو پھر چوہدری پرویز الٰہی ،حافظ عمار یاسر اور ملک اسد ڈھیر مونڈ کا پینل مسلم لیگ ق کے پلیٹ فارم سے سامنے آ سکتا ہے۔جبکہ سردار فیض ٹمن ،ملک فلگ شیر اعوان اور شہریار اعوان کے آزاد پینل کی بھی باتیں سامنے آ رہی ہیں۔ چوہدری پرویز الہٰی کا پی ٹی آئی کیساتھ پھڈا پڑا تو سردار منصور حیات ٹمن کو پی ٹی آئی کا ٹکٹ ملنے کا امکان ہے جس سے پی پی 23پر سردار آفتاب اکبر اور پی پی24پر کرنل سلطان سرخرو آسکتے ہیں ۔ بہرحال صورتحال انتہائی دلچسپ ہے اور آنے والے دوتین دنوں میں ضلع چکوال کا موجودہ سیاسی منظر نامہ ایک دفعہ پھر الٹ پلٹ ہونے کے امکانات ہیں۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -