منشیات کیخلاف آواز اٹھانے پربھارتی فوج ہراساں کررہی ہے کشمیری خاتون اتھلیٹ نگہت بشیر

  منشیات کیخلاف آواز اٹھانے پربھارتی فوج ہراساں کررہی ہے کشمیری خاتون ...

  

سرینگر (آئی این پی) مقبوضہ کشمیر میں ایک نوجوان خاتون اتھلیٹ نے کہا ہے کہ ضلع بارہمولہ میں اس کے آبائی قصبے سوپور میں ڈرگ مافیا کے خلاف آواز اٹھانے کے بعد بھارتی فوج انہیں اور اس کے اہل خانہ کو ہراساں کررہی ہے۔ سیلو سوپور سے تعلق رکھنے والی کراٹے کی کھلاڑی نگہت بشیر نے بتایا کہ جب سے اس نے سوپور میں ڈرگ مافیا کے خلاف آواز اٹھائی ہے تب سے اسے بہت ساری پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی فوج کے ایک میجر نے اس کے گھر میں داخل ہوکر داڑھی کی وجہ سے اس کے بہنوئی کو ہراساں کیا۔ انہوں نے کہاکہ جب میں نے آواز اٹھائی تو میجر نے مجھے یہ کہتے ہوئے دھمکی دی کہ وہ اپنی تمام گولیاں میرے جسم میں اتار دے گا۔ انہوں نے کہا کہ فوجیوں نے ہمارے گھر میں توڑ پھوڑ کی اور دروازے اور کھڑکیوں کو توڑ دیا۔ انہوں نے کہا کہ فوجیوں نے مجھے بتایا کہ انہیں میرے گھر کا محاصرہ کرنے کے احکامات ہیں۔نگہت نے اپنے گھر اور سامان کی توڑ پھوڑ کی ایک ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر شیئر کی ہے۔

خاتون اتھلیٹ

مزید :

صفحہ آخر -