کورونا ٹیسٹ لیبارٹریاں عوام کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنے میں مصروف

  کورونا ٹیسٹ لیبارٹریاں عوام کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنے میں مصروف

  

اسلام آباد(آن لائن)ملک بھر کووڈ19 کے ٹیسٹ لیبارٹریاں عوام کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنے میں مصروف ہیں جبکہ ٹیسٹنگ کٹس کی قیمت 9 ڈالر ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔حکومتی لیب 8ہزار اور پرائیویٹ ادارے 10 سے بارہ ہزار روپے فی کٹ وصول کر رہے ہیں۔انتہائی اہم ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ باہر ممالک میں کووڈ19 کے ٹیسٹ کے لیے فی کٹ کی قیمت 9 ڈالر ہے جو کہ پاکستانی روپے میں 14 سے پندرہ سو روپے میں ٹیسٹ کی قیمت بن رہی ہے لیکن حکومت کی جانب سے فی ٹیسٹ 8ہزار روپے میں لیا جا رہا ہے اور پرائیویٹ لیبارٹریاں اسی ٹیسٹ کے 10 سے بارہ ہزار روپے وصول کر رہی ہیں جو اب تک حکومت سمیت پرائیویٹ لیبارٹریاں عوام سے کروڑوں روپے صرف ٹیسٹ کی مد میں منافع کما چکی ہیں اور یہ سلسلہ مزید کہاں تک چلے گا اس سے متعلق کچھ کہا نہیں جا سکتا ہے۔ذرائع نے بتایا کہ حکومتی اداروں سے سستے ٹیسٹ کے لیے کٹس کی بات کی گئی تو انہوں نے ٹال مٹول سے کام لیتے ہوئے اجازت دینے سے گریزاں ہیں۔اسلام اباد کے رہائشی بشارت نامی شہری نے بتایا کہ انہوں نے ایک سو کے قریب باہر ملک سے کووڈ19 کے ٹیسٹ کی کٹس منگوائی تھیں اور انہوں نے اپنے دوست و احباب و فیملی کے ٹیسٹ کیے تھے جس فی ٹیسٹ خرچہ 1500 روپے تک ہے اور انہوں نے اس سلسلہ میں حکومت سے درخواست کی ہے کہ وہ انہیں اجازت دیں اور فی ٹیسٹ کم سے کم قیمت میں کر کے رپورٹ 15 منٹ میں جاری کر دی جائے گی لیکن اس حوالہ سے کوئی جواب نہیں ملا ہے۔

کورونا ٹیسٹ

مزید :

صفحہ آخر -