حکومت نجی تعلیمی اداروں کی مشکلات سے بخوبی آگاہ ہے، غلام سرور

حکومت نجی تعلیمی اداروں کی مشکلات سے بخوبی آگاہ ہے، غلام سرور

  

راولپنڈی(آن لائن) وفاقی وزیر برائے ہوا بازی غلام سرور خان نے کہا ہے کہ حکومت کو نجی تعلیمی اداروں کی مشکلات کا بخوبی اندازہ ہے اور مسائل کے حل کے لیے کوشاں ہمیں۔ملک کے مشکل ترین حالت میں حالیہ بجٹ پیش کیا اور عام شہریوں کی معاشی مشکلات کو دیکھتے ہوئے کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا۔سارے کام ریاست کے کرنے کے نہیں ہوتے عوام بھی اپنی ذمہ داریوں کا ادراک کرے ہم سب نے مل کر کورونا وباء سے چھٹکارا حاصل کرنا ہے۔ ان خیالات کا اظہارانہوں نے آل پاکستان پراِیویٹ سکولز مینجمنٹ ایسوسی کے ڈویژنل صدر ابرار احمد خان اور ان کے ہمراہ آنے والے وفد سے گفتگو کے دوران کیا۔ وفد میں چوہدری عطاء الرحمن، شیخ قمر، امجد خان، عاطف عزیز حقانی اور دیگر افراد شامل تھے۔ ابرار احمد خان نے ایپسما کے مرکزی صدر کاشف ادیب جاودانی کی طرف سے وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود سے ملاقات اور نجی تعلیمی اداروں کے مسائل کے حوالے سے تحرہری درخواست پیش کی اور کہا کہ نجی تعلیمی ادارے اس وقت ایک معاشی، سماجی اور معاشرتی بحران سے گزر رہے ہیں ان کی مشکلات کا اگر بروقت حل نہ نکا لا تو لاکھوں اساتذہ بے روزگار ہو جائیں گے اداروں کو ناقابل تلافی نقصان کا سامنا کرنا پڑے گاج۔ ابرار احمد خان کے مطانق غلام سرور خان کے ساتھ پرائیویٹ سکولز کے مسائل پر سیر حاصل گفتگو ہوئی اور غلام سرور خان نے کہا کہ پرائیویٹ سکولوں کے مسائل حل کرنے میں میں ذاتی دلچسپی لوں گا اور وفاقی وزیر تعلیم سے ملاقات کروانے کا وعدہ بھی کیا ہے اور کہا ہے کہ وہ خود بھی ہمراہ ہوں گے۔ وفاقی وزیر سرور خان نے مسائل کو حل کروانے میں اپنا بھرپور کردار ادا کرنے کا بھی یقین دلایا۔ انھوں نے مزید کہا کہ مجھیچار ماہ سے بند تعلیمی اداروں کی مالی مشکلات کا احساس ہے اور حکومت وقت سے جو ممکن ہوا ان کی مالی مدد کی جائے گی۔ ابرار احمد خان نے سرور خان کو ملاقات کا ایجنڈا اور وفد کے شرکاء کے نام ان کو دئے۔ انہوں نے کہا کہ ایک ہفتے کے اندر اندر ملاقات کا وقت لیا جائے گا۔ ابرار احمد خان نے سرور خان کا نجی اداروں کے مسائل میں ذاتی دلچسپی لینے پر ان کا شکریہ ادا کیا۔ اور یقین کا اظہار کیا کہ نجی اداروں کے مسائل کے حل میں اب کوئی رکاوٹ نہیں ہو گی۔

غلام سرور

مزید :

علاقائی -