ماہرین زراعت کی دھان کے کھیت میں متواتر پانی کھڑارکھنے کی ہدایت

  ماہرین زراعت کی دھان کے کھیت میں متواتر پانی کھڑارکھنے کی ہدایت

  

فیصل آباد (یواین پی) ماہرین زراعت نے جڑی بوٹیوں پر مؤ ثر کنٹرول کے لئے دھان کے کھیتوں میں متواتر کم از کم ایک ماہ تک پانی کھڑا رکھنے کی ہدایت کی ہے اور کہا ہے کہ لاب کی منتقلی کے بعد ایک ہفتہ تک کھیت میں پانی کھڑا رکھنے سے جڑی بوٹیوں پر مکمل کنٹرول سمیت بہتر پیداوار حاصل کی جا سکتی ہے۔کاشتکاروں کے نام پیغام میں انہوں نے کہا کہ کاشتکاروں کو چاہیے کہ وہ دھان کی فصل کی آبپاشی دستیاب آبی وسائل کے مطابق کریں نیز اگر معمول کے مطابق وافر پانی دستیاب ہو تو لاب لگاتے وقت پانی کو کم از کم چار سینٹی میٹر تک گہر ا ہونا چاہیے۔

جسے بعد میں 7 سینٹی میٹر تک بھی کیا جا سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ پانی لگانے کے بعد کھیت کو چند روز کے لئے ہوا لگوانی چاہیے اس کے بعد مطلوبہ مقدار میں نائٹروجن والی کھاد بھی ڈالنی چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ کھاد کے بعد پانی دینے سے شاندار نتائج حاصل کئے جا سکتے ہیں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ خود کار ٹیکنالوجی کی مدد سے پھپھوندی کش دوالگاتیار کیا گیا دھان کا بیج بکائنی جیسی بیماریوں کے خلاف زبردست قوت مدافعت اور بہتر پیداوار کا ضامن ہو سکتا ہے۔

مزید :

کامرس -