ڈیرہ کرونا سے 2ڈاکٹرز، نرس جاں بحق،شہرکی فضا سوگوار

  ڈیرہ کرونا سے 2ڈاکٹرز، نرس جاں بحق،شہرکی فضا سوگوار

  

ڈیرہ غازیخان(سٹی رپورٹر) ایک ہفتہ کے دوران دو مسیحاڈاکٹرز اور خدمت کے جذبہ سے سرشارپبلک ہیلتھ نرسنگ ڈیرہ کی سپریٹنڈنٹ کررونا وباء کے سبب شہادت نوش کر گئیں،شہر میں تاحال غم کی کیفیت، خوف کے اثرات ہیں۔ تفصیلات کے مطابق ڈیرہ میں جب بیشتر ڈاکٹرزکررونا وائرس میں مبتلا ہونے کے خوف سے اپنی سرکاری ڈیوٹیز انجام دینے سے انکاری اور اپنے(بقیہ نمبر29صفحہ6پر)

پرائیویٹ کلینکس کو بند کرکے اپنی پر آسائش رہائش گاہوں یا اپنے فارم ہاؤسز میں اپنے اہل خانہ کیساتھ آئسولیٹ ہوگئے توان حالات میں فزیشن ڈاکٹر جاوید اقبال باجوانی اور چیسٹ اسپیشلسٹ ڈاکٹر خالد مسعود قیصرانی اورایک نرسنگ سپریٹنڈینٹ نے کررونا کے خون آشام پنجوں میں جکڑی انسانیت کو بے یارو مددگار چھوڑ کر دیگر مسیحاؤں کیطرح جان چھڑا کر بھاگنے کی بجائے ان برے حالات میں اپنے بیوی اور بچوں کے مستقبل کی پرواہ کیے بغیر سسکتی تڑپتی انسانیت کی مسیحائی جاری رکھنے کا عزم کئے رکھا یہاں تک خود کے جسموں میں کررونا وائرس کا بے تحاشا وائرل منتقل کرکے باقاعدہ گر پڑنے تک تڑپتی بلکتی انسانیت کے علاج میں مصروف عمل رہیاور انھیں مسکرا کر خوبصورت زندگی کی نوید سُناتے رہے۔ اور بالآخر اپنے جانوں کے نذرانے جانِ آفریں کے سپرد کرتے ہوئے جامِ شہادت نوش کرگئے اور حقیقت میں کامیاب ہوگئے۔ان کی عظمت کو پورا شہر سلیوٹ پیش کر رہا ہے۔ جماعت اسلامی کے راہنما شیخ عثمان فاروق، سابق صدر بار یاسر کھوسہ، سابق جنرل سیکرٹری یونین آف جرنلسٹ سہیل رضا درانی، سئنیر نائب صدر چیمبر آف کامرس طارق اسماعیل قریشی، مرزا ادریس، جاوید درانی ایڈووکیٹ،سرجن ڈاکٹر یسین سیال، ڈاکٹر ندیم چوہان، ڈاکٹر حمادالدین ذکاء، ڈاکٹرامجدپرویز چوہدری ودیگر نے کہا کہ ان سمیت ملک بھر میں شہید ہونے والے دیگر مسیحاؤں کی عظمت کو سلام پیش کرتے ہیں ان سب کا خلاء رہتی دنیا تک پر نہیں ہوسکتا۔انہوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار، وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد، مشیر صحت پنجاب محمد حنیف پتافی، سیکرٹری ہیلتھ پنجاب اور پرنسپل غازی میڈیکل کالج اینڈ ٹیچنگ ہسپتال ڈاکٹر محمد آصف سے مطالبہ ہے کہ ڈی جی خان کے ٹیچنگ ہسپتال کے تین وارڈز کے نام ڈاکٹر جاوید اقبال باجوانی شہید اور ڈاکٹر خالد مسعود قیصرانی اور مرحومہ پبلک ہیلتھ نرسنگ ڈیرہ کی سپرٹنڈنٹ نسرین در محمد شہید کے مبارک ناموں پر منسوب کئے جائیں تاکہ آنیوالی نسلیں انکی خدمات کی بدولت انہیں ہمشہ یاد رکھ سکیں۔

فضا

مزید :

ملتان صفحہ آخر -