قبرستان کی مسماری قابل مذمت ہے‘ غلام حسین آفریدی

قبرستان کی مسماری قابل مذمت ہے‘ غلام حسین آفریدی

  

پشاور (سٹی رپورٹر) قبرستان بچاؤ تحریک نے اخون بابا قبرستان میں جبہ سہیل آباد کے قریب قبروں کو مسمار کرکے ٹیوب ویل کی تعمیر کی پرزور مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پشاور ہائی کورٹ 2011 میں قبرستانوں کے تقدس اور تحفظ بارے واضح احکامات جس کے تحت قبرستانوں میں ہر قسم کی تعمیرات غیر قانونی اور قابل گرفت جرم قرار دی گئی ہے جبکہ تمام مکاتب فکر کے مفتیان صاحبان نے قبرستانوں میں ہر قسم کی تعمیرات کر شریعت اور اسلامی تعلیمات کے منافی قرار دیا، تحریک کے صدر غلام حسین آفریدی نے کہا ھے کہ جب سرکاری ادارے خود قانون شکنی کرتے ھیں اور قبرستانوں کی بے حرمتی کرتے ہے تو انکا یہ اقدام قبضہ مافیا کے لیئے آسانیاں پیدا کرتا ہے اور یوں لاقانونیت عام ہوجاتی ہے انہوں نے صوبائی حکومت اور کمشنر پشاور ڈویڑن سے مطالبہ کیا ہے کہ ٹاون تھری انتظامیہ کی جانب سے قبرستان میں نئے ٹیوب ویل کی تعمیر کو فوری روکیں اور پرانے ٹیوب ویل کو فعال بنا کر اسکی استعداد میں اضافہ کیاجائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -رائے -