لنڈیکوتل میں بجلی کی عدم دستیابی سے عوام بلبلا اٹھے

لنڈیکوتل میں بجلی کی عدم دستیابی سے عوام بلبلا اٹھے

  

خیبر (بیورورپورٹ)لنڈیکوتل میں بجلی کی عدم دستیابی سے عوام بلبلا اٹھے پینے کی صاف پانی کی شدید مشکلات پیدا ہو گئے ہیں چو بیس گھنٹوں میں ایک یا دو گھنٹوں تک بجلی ہو تی ہے جبکہ بعض علاقوں میں دو تین دن بعد ایک گھنٹے کیلئے آتی ہے کم وولٹیج سے بھی لوگ پریشان ہیں جبکہ زیا دہ تر علاقوں میں کم وولٹیج سے ایکٹرانکس اشیاء خراب ہو گئے ہیں سرکاری طور پر چھ گھنٹے تک بجلی مہیا کرنے کا نوٹیفکیشن جا ری کیا ہے لیکن گر یڈ عملہ صر ف رات کے وقت دوگھنٹے تک فیڈرز چلاتے ہیں،لوڈکی وجہ فیڈرز نہیں چلتے اس لئے مجبورا ہر فیڈر کو دو گھنٹوں تک چلانے کی کوشش کرتے ہیں لنڈیکوتل کے مختلف علاقوں خیبر ذخہ خیل میں ولی خیل نیکی خیل سلطان خیل،صدوخیل سمیت دور افتادہ علاقہ مزرینہ میں جبکہ شینواری علاقوں خوگا خیل،شیخ مل خیل،مختیار خیل،پیروخیل،آشخیل میں دو گھنٹوں کیلئے رات کے وقت بجلی آتی ہے جبکہ دور فتادہ علاقہ کم شلما ن اور لوئے شلمان میں دو اور تین دنوں بعد بجلی ایک گھنٹے یا دو گھنٹوں کیلئے بجلی ہو تی ہے بجلی کی عدم دستیابی کی وجہ سے گھریلوں ضروریات پو ری نہیں ہو تی بلکہ کم لولٹیج کی وجہ سے پینے کی صاف پانی کی شدید قلت پیدا ہو ئی گئی ہے خواتین دور دور سے پانی سروں پر لاتی ہیں اور بعض علاقوں میں ٹینکرز سے پانی خریدتے ہیں گز شتہ مہینے ٹیسکو کے اعلی حکام نے لنڈیکوتل گریڈ اسٹیشن سے چھ گھنٹے بجلی فراہم کرنے کا نوٹیفیکشن جا ری کیا تھا لیکن گریڈ عملہ صرف دوگھنٹوں کیلئے نمبر کی حساب سے فیڈر چلا تے ہیں اس دوگھنٹوں کے دوران کئی بار بجلی ٹرپ ہو جا تی ہے عوام نے روشنی اور پنکھا چلانے کیلئے سولر سسٹم لگا ئیں ہیں لیکن سولر سسٹم سے پانی کی مشین اور استری وغیرہ نہیں چلا سکتے اس سلسلے میں گریڈ عملے نے بتا یا کہ لوڈ زیا دہ ہے سارے فیڈر ایک ساتھ نہیں چلا سکتے وہ کوشش کر تے ہیں کہ ہز فیڈر کو دو دو گھنٹوں کیلئے چلا ئیں کیونکہ لوڈ کی وجہ سے فیڈر ٹرپ ہو تے ہیں بجلی کی عدم دستیابی کی وجہ سے ہسپتالوں میں داخل مریضوں بازاروں میں تاجر اور گھروں میں زیا دہ تر خواتین اور بچے شدید اذیت سے دوچار ہو تے ہیں ان تمام صورتحال پر منتخب نمائندوں کی خاموشی معنی خیز ہے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -رائے -