صوبہ میں کینسر ہسپتال، 13بارڈر مارکیٹ تعمیر، ہیلتھ انشورنس سکیم لا رہے ہیں: وزیر خزانہ بلوچستان

صوبہ میں کینسر ہسپتال، 13بارڈر مارکیٹ تعمیر، ہیلتھ انشورنس سکیم لا رہے ہیں: ...

  

کوئٹہ (این این آئی) وزیرخزانہ بلوچستان میر ظہور احمد بلیدی نے کہا ہے کہ بلوچستان کو آئندہ مالی سال کے دوران این ایف سی ایوارڈ کے تحت 251ارب روپے ملیں گے اس بار این ایف سی میں صوبے کو پہلے سے30ارب روپے کم ملیں گے۔گزشتہ سال پیش کردہ بجٹ کا حجم 419ارب روپے تھا،اس بار465ارب کا بجٹ پیش کیاگیا۔صوبے کو آئندہ سال بجٹ میں 87روپے کے خسارے کاسامنا ہے۔صوبائی حکومت کی جانب سے صحت،توانائی سمیت مختلف شعبوں میں ٹیکس کی چھوٹ دی گئی ہے۔کوئٹہ میں کینسر ہسپتال کا منصوبہ ایک ارب 70 کروڑ روپے کی لاگت سے دو سال میں مکمل ہوگا۔سرحدی علاقوں میں وفاق سے مل کر 13بارڈر مارکیٹ قائم کی جارہی ہیں۔ اتوار کویہاں پوسٹ بجٹ پریس کانفرنس کرتے ہوئے میر ظہور بلید ی نے کہا کہ ملک کو اس سال کوروناوائرس کی وجہ سے مالی بحران کاسامنارہاہے۔ صوبائی حکومت کی جانب سے صحت،توانائی سمیت مختلف شعبوں میں ٹیکس کی چھوٹ دی گئی ہے۔ صوبے میں سماجی اورمعاشی شعبے کیلئے تین ارب روپے کی سرمایہ کاری کی گئی ہے، جبکہ ہم سرکاری ملازمین کے لئے ایک ارب روپے کی ہیلتھ انشورنس اسکیم لارہے ہیں۔ صوبے میں ٹڈی دل کے خاتمے کے لئے ایک ارب روپے مختص کئے گئے ہیں۔گزشتہ سال واشک پشین خضدار سمیت تما م حلقوں کو اہمیت دی گئی۔ سرحدی اضلاع میں خاردار تار لگائی جارہی ہے۔انہوں نے کہا کہ بلوچستان عوامی اینڈوومنٹ فنڈ کے تحت 1ہزار افراد نے علاج کروایا ہے۔تین ارب روپے سوشو اکنامک کے لئے انویسٹ کئے ہیں تاکہ وبائی امراض سے نمٹ سکیں۔

وزیرخزانہ بلوچستان

مزید :

پشاورصفحہ آخر -رائے -