تھوک کی مدد سے کورونا کا ٹیسٹ وہ بھی گھر بیٹھے؟ برطانوی ماہرین نے نئی امید دلادی

تھوک کی مدد سے کورونا کا ٹیسٹ وہ بھی گھر بیٹھے؟ برطانوی ماہرین نے نئی امید ...
تھوک کی مدد سے کورونا کا ٹیسٹ وہ بھی گھر بیٹھے؟ برطانوی ماہرین نے نئی امید دلادی

  

لندن(ڈیلی پاکستان آن لائن)دنیا میں جہاں کورونا وائرس اپنا پھیلاؤ جاری رکھے ہوئے ہے وہیں دنیا بھر کے سائنسدان اس پر قابو پانے کے لیے اپنی کوششیں بھی جاری رکھے ہوئے ہیں۔

انہی کوششوں میں برطانوی ماہرین کی یہ کوشش بھی جاری ہے جس میں انہوں نے امید دلائی ہے کہ اب لوگ گھر بیٹھے اپنی تھوک کی مدد سے کورونا وائرس کا ٹیسٹ کرسکیں گے۔

برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق ماہرین  کورونا وائرس سے متعلق ایک ایسے ٹیسٹ کا تجربہ کررہے ہیں جس سے لوگ گھر بیٹھے اپنے تھوک پر ٹیسٹ کرنے سے یہ جان سکیں گے کہ وہ اس وائرس سے متاثر تو نہیں ہیں۔اس ٹیسٹ کے لیے سواب جیسے طریقے کی ضرورت ہی نہیں پڑتی۔

اس ٹرائل میں 14 ہزار سے زائد افراد سمیت ضروری خدمات سرانجام دینے والے ورکرز اور ان کے ساتھ رہنے والے لوگ شامل ہوں گے۔

ساؤتھ ہمپٹن یونیورسٹی کا یہ تجربہ چار ہفتوں تک جاری رہے گا اور ماہرین کو امید ہے کہ تھوک سے ٹیسٹ کرنے کا طریقہ لوگوں کے لیے بہت آسانی پیدا کرے گا۔ سواب کا طریقہ قدرے تکلیف دہ ہے اور اسے ناک یا گلے میں اندر تک لے جانا پڑتا ہے۔

اس تجرے میں شامل یونیورسٹی کےعملے کے کچھ افراد اپنے ہفتے بھر کے تھوک کے نمونے لیب کو مہیا کریں گے۔

ماہرین کے خیال میں اس طریقے سے ایک گھنٹے کے اندر ٹیسٹ کے نتائج گھر بیٹھے حاصل کیے جا سکیں گے۔ اس وقت سواب کے طریقے سے کورونا وائرس کے ٹیسٹ پر خاصا وقت صرف ہو جاتا ہے۔

خیال رہے برطانیہ میں بھی کورونا وائرس نے بری طرح تباہی پھیلائی جہاں 40ہزار سے زائد اموات ہوئیں جب کہ معیشت لاک ڈاون کی وجہ سے بری طرح متاثر ہوئی تاہم اب وہاں لاک ڈاون میں نرمی کردی گئی ہے جب کہ بازار اور شاپنگ سنٹرز کھول دیے گئے ہیں۔

مزید :

برطانیہ -خصوصی رپورٹ -کورونا وائرس -