18 گھنٹے پیشاب روکنے والے شخص کا مثانہ پھٹ گیا، ایسی غلطی کبھی نہ کریں

18 گھنٹے پیشاب روکنے والے شخص کا مثانہ پھٹ گیا، ایسی غلطی کبھی نہ کریں
18 گھنٹے پیشاب روکنے والے شخص کا مثانہ پھٹ گیا، ایسی غلطی کبھی نہ کریں

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) تادیر پیشاب روکے رکھنے سے ڈاکٹرز بھی سختی سے منع کرتے ہیں اور اب ایسا کرنے سے چین میں ایک آدمی کے ساتھ ایسا تشویشناک کام ہونے کی خبر آ گئی ہے کہ آئندہ کوئی شخص یہ کام نہیں کرے گا۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق یہ آدمی رات کو شراب پیتا رہا اور پھر اس نے اگلے 18گھنٹے تک پیشاب روکے رکھا جس سے اس کا مثانہ پھٹ گیا۔ چین کے مشرقی صوبے ژی جیانگ کے رہائشی اس آدمی کا نام ’ہو‘ بتایا گیا ہے جسے تشویشناک حالت میں ژوجی پیپلز ہسپتال لایا گیا۔

ہو کا علاج کرنے والے ڈاکٹر نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ ”مریض کو مثانہ پھٹنے سے اتنی شدید تکلیف لاحق ہوئی کہ وہ سیدھا لیٹ بی نہیں سکتا تھا۔ اس نے رات کو 10سے زائد بیئرز پیں اور پھر سو گیا۔ اگلا تمام دن وہ سوتا رہا اور 18گھنٹے بعد جب اس کا مثانہ پھٹا تو تکلیف کی شدت کے باعث وہ نیند سے بیدار ہوا۔ ہم نے اس کے سکین کیے تو معلوم ہوا کہ اس کے مثانے کے 3ٹکڑے ہو چکے تھے، جس پر ہمیں ہنگامی طور پر اس کا آپریشن کرنا پڑا۔ خودقسمتی سے ہم اس کا مثانہ ری پیئر کرنے میں کامیاب ہو گئے اور اب اس کی حالت خطرے سے باہر ہے۔“

مزید :

بین الاقوامی -