پی ٹی آئی کی سپریم کورٹ سے محمد زبیر کے انٹرویو کے ازخود نوٹس کی اپیل

پی ٹی آئی کی سپریم کورٹ سے محمد زبیر کے انٹرویو کے ازخود نوٹس کی اپیل
پی ٹی آئی کی سپریم کورٹ سے محمد زبیر کے انٹرویو کے ازخود نوٹس کی اپیل

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)پی ٹی آئی رہنما رؤف حسن نے سپریم کورٹ سے اپیل کی ہے کہ مسلم لیگ ن کے سابق رہنما محمد زبیر نے اپنے انٹرویو میں کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت ختم کرنے کے لیے سازش ہوئی، سپریم کورٹ محمد زبیر کے بیان پر کمیشن آف انکوائری تشکیل دے۔

رؤف حسن نے اسلام آباد میں اپنی پریس کانفرنس کے دوران کہا ہے کہ محمد زبیر کا بیان بانی پی ٹی آئی کے بیانیے کے مطابق ہے، محمد زبیر کا اعترافی بیان کسی مہذب معاشرے میں ہوتا تو نوٹس لیا جاتا۔انہوں نے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ سپریم کورٹ محمد زبیر کے انٹرویو کا ازخود نوٹس لے۔محمد زبیر نے کہا پی ٹی آئی حکومت کو گرانے کے لیے جنرل باجوہ نے رابطہ کیا۔

اُن کا کہنا تھا کہ آئین پاکستان کی خلاف ورزی کی گئی، سازش میں ملوث افراد کو سزا دی جائے، آئین کی خلاف ورزی کا معاملہ نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔محمد زبیر نے کہا مریم نواز، نوازشریف، شہباز شریف بھی سازش میں شامل تھے، محمد زبیرکا بیان بانی پی ٹی آئی کے بیان کو ثابت کرتا ہے، بانی پی ٹی آئی کی حکومت گرا کر مجرموں کا ٹولہ مسلط کیا گیا۔

رؤف حسن نے کہا ہے کہ نارووال کے ایک ارسطو نے بیان دیا کہ بانی پی ٹی آئی کو پانچ سال قید میں رکھا جائے۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -