بیٹے کی موت کا صدمہ، ماں بھی 10منٹ بعد چل بسی

بیٹے کی موت کا صدمہ، ماں بھی 10منٹ بعد چل بسی
بیٹے کی موت کا صدمہ، ماں بھی 10منٹ بعد چل بسی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نئی دہلی (ڈیلی پاکستان آن لائن )غازی پور ضلع کے ناگسر نیواجو رائے گاوں میں ایک انتہائی افسوسناک واقعہ پیش آیا جب ماں اپنے بیٹے کی موت کا صدمہ برداشت نہ پر پائی اور 10منٹ بعد انتقال کرگئی۔
بین الاقوامی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق موہن لال گپتا عمر 45 سال کی اچانک موت ہوگئی۔ اسی سالہ ماں سرسوتی دیوی سے بیٹے کی موت کی اطلاع ملنے پر صدمہ برداشت نہ ہوا اور وہ بھی چل بسیں۔رپورٹ کے مطابق موہن لال ڈیوٹی پر جانے کے لئے تیار ہورہا تھا کہ اچانک اس کے جسم میں شدید درد ہونے لگا۔ جس سے اس کی موت ہوگئی۔ جب اس کی ماں کو اس کا علم ہوا تو وہ بھی صدمہ برداشت نہ کرسکی۔
اس سے قبل بھارت کی ریاست تلنگانہ کے ضلع سدی پیٹ میں گھر کے باہر کھیلتی شیرخوار بچی کی دردناک موت سے علاقے میں کہرام مچ گیا تھا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق کڑا ورگو گاو¿ں کے رہائشی شبیر اور زرینہ کی شیرخوار بیٹی علیشا کی عمر ڈیڑھ سال تھی۔ جوڑے کی دو بیٹیاں اور ایک بیٹا ہے۔زرینہ بچوں کو لے کر میکے آئی تھی جہاں علیشا گھر کے باہر کھیل رہی تھی اور اسی وقت اس نے کنکر اٹھا کر منہ میں ڈالا جو اس کی سانس کی نالی میں جا پھنسا۔
اہل خانہ فوراً بچی کو لے کر سرکاری ہسپتال پہنچے جہاں ڈاکٹروں نے انہیں نجی ہسپتال لے جانے کو کہا۔ والدین بچی کو نجی سپتال منتقل کر رہے تھے کہ راستے میں معصوم کی موت واقع ہوگئی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -