خواتین ووٹرز کی رجسٹریشن میں کمی

خواتین ووٹرز کی رجسٹریشن میں کمی
خواتین ووٹرز کی رجسٹریشن میں کمی
کیپشن: Election

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) خواتین ووٹرز کی کم رجسٹریشن کے مسئلے نے 2013ءکے عام انتخابات میں مساوی نمائندگی کے آئینی وعدے کو دھندلا دیا تھا ان انتخابات میں 86.2 ملین ووٹروں میں خواتین کاتناسب 43.6 فیصد تھا جبکہ 2008ء کے 80ملین ووٹروں میں یہ شرح 44 فیصد تھی۔ فری اینڈ فیئر الیکشن نیٹ ورک (فافین) کی تجزیہ رپورٹ کے مطابق صوبائی سطح پر مرد وخواتین ووٹرز کی شرح میں مزید کمی ہوئی ہے۔ پنجاب میں 2008ءکے انتخابات میں شرح 45 فیصد تھی جو 2013ءمیں 43.8 فیصد رہ گئی۔ بلوچستان میں یہ تناسب 45.9 فیصد کم ہوکر 42.6 فیصد ہوگیا، خواتین ووٹروں کا تناسب وفاق کے وزیر انتظام علاقوں میں بڑھا ہے، 200ءمیں 30.1 فیصد تھا اور 2013ءمیں 34.2 فیصد ہوگیا۔مقامی میڈیا کے مطابق خیبرپختونخوا ہ میں 40.7 فیصد سے بڑھ کر 42.8 فیصد ہوا، اسلام آباد دارالحکومت علاقے میں 45.8 فیصد سے 46.3 فیصد بڑھا، سندھ میں معمولی اضافہ سے 44.2 فیصد سے 44.8 فیصد سے 46.3 فیصد بڑھا۔

مزید :

الیکشن ۲۰۱۳ -