عمران خان اور آئی جی کی موجودگی میں پرویز خٹک کی قانون کی کھلم کھلا خلاف ورزی

عمران خان اور آئی جی کی موجودگی میں پرویز خٹک کی قانون کی کھلم کھلا خلاف ورزی
عمران خان اور آئی جی کی موجودگی میں پرویز خٹک کی قانون کی کھلم کھلا خلاف ورزی

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) خیبر پختونخوا کے وزیراعلیٰ پرویز خٹک اپنی صحت اور قانون کے تقاضوں کو بالائے طاق رکھتے ہوئے عوامی مقام پر سگریٹ نوشی کرنے کی وجہ سے ہدف تنقید بن گئے ہیں۔

کیا آپ کے دوست واقعی ہی سچے دوست ہیں یا وقت کی ضرورت؟معلوم کرنے کا طریقہ جانئے

اخبار ”ڈان“ کے مطابق وزیراعلیٰ اپنی پارٹی کے چیئرمین عمران خان اور آئی جی خیبر پختونخوا کی موجودگی میں سگریٹ نوشی کرتے رہے۔ این جی او "نیٹ ورک فار کنزیومر پروٹیکشن" کی طرف سے پرویز خٹک کو ایک خط لکھ کر توجہ دلائی گئی ہے کہ قانون کی خلاف ورزی کرنے پر انہیں ایک ہزار روپے جرمانہ، جبکہ دوسری دفعہ خلاف ورزی کرنے پر ایک لاکھ روپے تک جرمانہ ہوسکتا۔ خط میں اس بات پر افسوس کا اظہار کیا گیا ہے کہ صوبے کے چیف ایگزیکٹو ہونے کے باوجود انہوں نے قانون کی خلاف ورزی کی۔ ان کے عمل کو نوجوان نسل کے لئے بھی بری مثال قرار دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ کینسر کے خلاف جنگ کرنے والے پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان تمباکو نوشی کی حوصلہ شکنی کے لئے بھی سرگرم رہے ہیں لیکن ان کی پارٹی کے سینئر رہنما نے ان کی موجودگی میں عوامی مقام پر سگریٹ نوشی کر کے سب کو حیران کر دیا ہے۔

مزید : اسلام آباد