فرانس ٗعدالت کامعمر الیکٹریشن کو پابلو پِکاسو کے 200 سے زائد چوری شدہ شاہکار لوٹانے کا حکم

فرانس ٗعدالت کامعمر الیکٹریشن کو پابلو پِکاسو کے 200 سے زائد چوری شدہ شاہکار ...

پیرس (این این آئی)فرانس کی ایک عدالت نے ایک معمر الیکٹریشن کو پابلو پِکاسو کے 200 سے زائد چوری شدہ شاہکار لوٹانے کا حکم جاری کیا ہے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق75 سالہ پئیر لی گونیک اور ان کی اہلیہ ڈینیئل کو ان شاہکاروں کو تقریباً 40 برس تک اپنے گھر میں چھپائے رکھنے پر دو سال کی سزا بھی سنائی گئی ہے جسے معطل کر دیا گیا ۔پئیر لی گونیک نے دعویٰ کیا کہ پِکاسو نے 1973 میں اپنی وفات سے پہلے شاہکاروں کا یہ خزینہ انھیں سونپ دیا تھا۔آرٹ کے یہ شاہکار اب پِکاسو ایڈمنسٹریشن کو واپس کر دیے جائیں گے۔ شاہکاروں کی قیمت کا اندازہ ابھی نہیں لگایا گیا تاہم 1942 میں بنائی گئی پِکاسو کی محبوبہ ڈورا مار کی ایک پورٹریٹ گذشتہ برس مئی کے مہینے میں 22.6 ملین ڈالر میں فروخت ہوئی تھی۔ان چوری شدہ شاہکاروں میں 1900 اور1932 کے دوران تخلیق کیے گئے کئی لتھوگراف پورٹریٹ واٹر کلر اور سکیچ شامل ہیں۔سماعت کے دوران پئیر لی گونیک نے عدالت کو بتایا کہ پکاسو کو مجھ پر مکمل اعتماد تھاشاید یہ میری صواب دید تھی۔انہوں نے کہاکہ پکاسو کی اہلیہ جیکلین نے ایک ڈبے میں آرٹ کے 271 نمونے دیتے ہوئے کہا کہ یہ تمہارے لئے ہیںیہ شاہکار ان کے گیراج میں 2000 تک پڑے رہے جس کے بعد وہ ان کی تصدیق کرانے کیلئے انھیں پیرس لے گئے تاہم اس موقع پر ان کے ورثا نے ان کی شکایت کر دی۔استغاثہ نے پئیر لی گونیک اور ان کی اہلیے کیلئے پانچ سال کی معطّل سزا کا مطالبہ کیا تھا۔

مزید : کلچر