شرم تم کو مگرنہیں آتی!

شرم تم کو مگرنہیں آتی!
شرم تم کو مگرنہیں آتی!

  

کیاخوب گایا ہے نصرت فتح علی خان صاحب نے ’’ اَب کیاسوچیں کیاہوناہے جوہوگا اچھا ہوگا ‘‘ جی ہاں جناب ! ٹھیک سمجھے آپ ، میں ٹیم پاکستان ہی کی بات کررہاہوں جو آئی سی سی ورلڈکپ 2015سے باہرہوچکی ہے۔ آسٹریلیا کے خلاف اہم کوارٹرفائنل میچ میں پاکستان نے ٹاس جیت کربیٹنگ کافیصلہ کیااورشروع سے ہی ٹیم لڑکھڑاتی ہوئی نظرآئی جس سے سب کواُمیدیں تھیں یعنی سرفراز احمد، وہ بھی دھوکہ دے گئے اوردھوکہ کیسے نہ دیتے مقابلہ جو ورلڈکپ کے سب سے بہترین باؤلر سٹارک سے تھا جہاں سٹارک بازی مارگئے اورسرفرازہمت ہارگئے اگریہ کہاجائے کہ کسی بھی بلّے باز نے ذمہ دارانہ اینگز نہیں کھیلی تو غلط نہیں ہوگا۔ مصباح الحق بھی رنز میں زیادہ اضافہ نہیں کرپائے اور شاہدآفریدی کچھ کرنے کی پوزیشن میں تھے۔ آخر شاہدی آفریدی وکٹ پر کیوں نہیں کھڑے ہوئے ، کیوں سنگلز، ڈبلز نہیں بنائیں۔ جب آپ کوباؤنڈریز مل رہی ہیں توکیوں سٹرائیک روٹیٹ نہیں کی جاسکتی تھی کس چیز کی جلدی تھی بھائی آپ کو؟ یہ آپ کاآخری ورلڈکپ تھا ، لیکن ہمیشہ کی طرح شاہدآفریدی غیرجانبدارانہ شاٹ کھیلتے ہوئے آؤٹ ہوگئے ۔ خیر !پاکستان نے صرف 213رنز ہی بنائے لیکن اُمید ابھی بھی باقی تھی کیونکہ پاکستان اپنے پچھلے چار میچ صرف باؤلنگ کی وجہ سے ہی جیتاتھا اورشاید یہ بھی جیت جاتا اگرکچھ کیچز ڈراپ نہ ہوتے اور کاش کالفظ رہتی زندگی تک سب پاکستانیوں کی زبان پررہے گا۔یقیناًپاکستان کو اس میچ میں جیت کے بہت مواقع ملے لیکن فیلڈرز نے قسم کھائی ہوئی تھی کہ کیچز نہیں پکڑنے ۔ جہاں واٹسن کا کیچ چاررنز پر ڈراپ ہواوہیں وہ 64* کی ناقابل شکست اینگز کھیل گئے اور آسٹریلیا کی جیت میں اہم کرداراداکیا۔اگریہ کہاجائے کہ وہاب ریاض نے میچ کا مزہ دوبالاکردیا تویہ بھی غلط نہیں ہوگا۔ وہاب ریاض کی تیز گیندیں اورآسٹریلین بلّے باز کیا ہی منظرتھا۔یقین مانیے وہاب ریاض کو دیکھ کرشعیب اخترکی یادآگئی۔

اس جیت کے ساتھ ہی آسٹریلیا سیمی فائنل کیلئے کوالیفائی کرچکاہے جہاں اُس کامقابلہ بھارتی ٹیم سے ہوگا ۔ یاد رہے کہ بھارتی ٹیم اپنے سات کے سات میچ جیت چکی ہے اورٹورنامنٹ میں مخالف ٹیم کے خلاف سب سے زیادہ وکٹیں بھی حاصل کرچکی ہے۔ جن کی تعداد70ہے اورورلڈ کپ کی کسی بھی ٹیم نے اگراپنی سب کم وکٹیں گنوائیں تووہ بھی بھارتی ٹیم ہے، اِن وکٹوں کی تعداد33ہے۔ یقیناًبھارت اور آسٹریلیا کے مابین بہت ہی کانٹے دار سیمی فائنل دیکھنے کوملے گا۔ یہ ساتویں بارہوگا کہ آسٹریلین کرکٹ ٹیم ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں کھیلتی نظرآئے گی جوکسی بھی ٹیم کا سب سے زیادہ بارسیمی فائنل کھیلنے کاریکارڈ ہوگا لیکن !اگر نیوزی لینڈ بھی اپناکوارٹرفائنل جیت جاتی ہے تو وہ بھی ساتویں بار ہی ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں کھیلتی نظرآئے گی۔ پاکستان کی اس ہار کے بعدمصباح الحق، شاہدآفریدی اوریونس خان کاون ڈے کیرئیر اختتام کو پہنچا۔ یقیناًمصباح الحق پاکستان کرکٹ کی تاریخ کے بہترین کپتانوں میں سے ایک ہیں اورجس ٹیم کی کپتانی اُن کو ملی وہ پاکستانی کرکٹ کی تاریخ کی سب سے کمزورٹیم تھی اوراگربات کی جائے شاہد آفریدی کی تو جاتے جاتے آفریدی ایک رکارڈ اپنے نام ضرورکرگئے جہاں انہوں نے ورلڈ کپ کی تاریخ میں12چھکے لگائے جوکسی بھی پاکستانی کھلاڑی کا سب سے زیادہ چھکوں کا ریکارڈ ہے اورمصباح الحق کیوں پیچھے رہیں بھائی! مصباح الحق نے ورلڈ کپ میں7چھکے لگائے توکسی بھی پاکستانی کپتان کے ورلڈکپ میں سب سے زیادہ چھکے ہیں۔ خیر !آسٹریلیا کی اپنے ہوم گراؤنڈ میں پاکستان کے خلاف تمام فارمیٹس میں یہ بارہویں لگاتارجیت تھی۔ اور وہ کہتے ہیں نا Catches Win Matches ٹھیک کہتے ہیں۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی