لیبیا کے جنگی طیارون کی طرابلس ایر پورٹ پر بمباری

لیبیا کے جنگی طیارون کی طرابلس ایر پورٹ پر بمباری

 طرابلس (اے پی پی) لیبیا کے جنگی طیاروں کی طرابلس ایرپورٹ پر بمباری کے بعد اقوام متحدہ کے امن مذاکرات کے عمل میں حریف پارلیمنٹ کے وفد کی روانگی ملتوی ہوگئی ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق طرابلس ایرپورٹ پر ہونے والی بمباری سے رن وے کو خاصا نقصان پہنچا ہے جس کی بنا پر ایرپورٹ سے کسی بھی طرح کی پرواز بھرنے کا عمل متاثر ہوگیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق رن وے کی تعمیر کا عمل جاری ہے اور تعمیر مکمل ہونے پر طیاروں کی پرواز کا عمل شروع ہوجائے گا البتہ بمباری کے نتیجے میں حریف پارلیمنٹ کے نمائندہ وفد کی، اقوام متحدہ کے امن مذاکرات میں شرکت کیلئے روانگی موخر ہوگئی ہے۔ اقوام متحدہ کی کوششوں سے ہونے والے اس اجلاس میں لیبیا میں متحدہ قومی حکومت کی تشکیل کے حوالے سے فریقین کو راضی کرنے کی کوشش کی جائیگی۔ واضح رہے کہ اس وقت لیبیا میں دو حکومتین قائم ہیں اور دونوں طرف کی، اپنی الگ الگ پارلیمنٹ بھی بنی ہوئی ہے۔ لیبیا کے وزیراعظم عبداللہ الثنی، طرابلس پر مخالفین کا قبضہ ہوجانے کے بعد مشرقی لیبیا میں رہائش پذیر ہیں۔

مزید : عالمی منظر