یوم پاکستان پاک فوج کی فل ڈریس ریہرسل، شہر کی فضائی نگرانی موبائیل فون سروس بند

یوم پاکستان پاک فوج کی فل ڈریس ریہرسل، شہر کی فضائی نگرانی موبائیل فون سروس ...

 اسلام آباد(اے این این) یوم پاکستان کی مناسبت سے پاک فوج کی فل ڈریس ریہرسل، شہر کی فضائی نگرانی ،پریڈ ایونیو جانے والے راستے بند،ٹریفک متبادل راستوں پر منتقل ،موبائل فون سروس معطل،جڑواں شہروں کے داخلی خارجی راستوں پرپاک فوج اور پولیس کی اضافی نفری تعینات،سکیورٹی انتظامات کی نگرانی کے لئے فوج کا خصوصی کنٹرول روم قائم کر دیا گیا،فورسز نے راولپنڈی میں ہوٹل خالی کرا لئے،مالکان کو 3روز تک کمرے کسی کو کرائے پر نہ دینے کے احکامات جاری۔تفصیلات کے مطابق ہفتہ کو پریڈ ایونیو میں 23مارچ کو یوم پاکستان کی مناسبت سے پاک فوج کی فل ڈریس ریہرسل ہوئی جس میں پاک فوج کے جوانوں نے اپنے فن کا مظاہرہ کیا۔اس موقع پر اعلیٰ حکام بھی موجود تھے۔فل ڈریس ریہرسل کے موقع پر راولپنڈی اور اسلام آباد میں سکیورٹی کے سخت انتظاماے کئے گئے تھے۔پریڈ کی تیاریوں کے باعث اسلام آباد اور راولپنڈی میں موبائل فون جزوی طور پر معطل رہی ۔ سیکیورٹی کے پیش نظر پریڈ ایونیو کی جانب سے جانے والے تمام راستوں کو بند کیا گیا۔ اسلام آباد اور راولپنڈی کے داخلی اور خارجی راستوں پر چیکنگ کی جاتی رہی اور سیکیورٹی کے لئے پاک فوج اور اسلام آباد پولیس کے اضافی دستے تعینات رہے۔اسلام آباد میں فضائی نگرانی کا سلسلہ بھی جاری رہا۔ فوج کا خصوصی کنٹرول روم بھی قائم کیا گیا ہے، جہاں سے سیکیورٹی انتظامات کی نگرانی کی جاتی رہی،اس کنٹرول روم سے کسی بھی مشکوک سرگرمی کا جائزہ لیا جائے گا جب کہ اسلام آباد اور راولپنڈی کے داخلی و خارجی راستوں پر چیکنگ پوائنٹس بنائے گئے ہیں جہاں سے داخل ہونے والوں سے سخت چیکنگ لی جارہی ہے۔۔سکیورٹی انتظامات کے حوالے سے 23مارچ کو یوم پاکستان سے متعلق فوجی پریڈ تک یہ سلسلہ جاری رہے گا۔پریڈ ایوینیو کے اطراف سیکیورٹی کے لئے پاک فوج اور اسلام آباد پولیس کے جوان تعینات ہیں جو تقریب کے اختتام تک سیکیورٹی کی ذمہ داریاں سنبھالیں گے۔پریڈ ایونیو آنے والی تمام اہم شاہراہیں ہر قسم کی ٹریفک کیلئے بند کر دی گئی ہیں ۔ راولپنڈی کو اسلام آباد سے ملانے والی مصروف ترین شاہراہ مری روڈ کو شمس آباد کے مقام پر ناکہ لگا کر بند کر دیا گیا ہے جبکہ ایکسپریس وے پر ایئرپورٹ چوک، کھنہ پل اور شکرال کے مقام پر ناکے لگا کر ٹریفک متبادل راستوں کے ذریعے بحال رکھی گئی ہے ۔ آئی جے پی روڈ کو ڈبل روڈ کے مقام پر بند کر کے ٹریفک کا رخ پشاور موڑ کشمیر ہائی وے کی طرف موڑا جا رہا ہے ۔ راولپنڈی سے اسلام آباد آمدورفت کے لئے کھنہ پل سے چک شہزاد جبکہ کشمیر ہائی وے بر راستہ گولڑہ اور ترنول کے مقامات سے کھولا گیا ہے ۔ راولپنڈی میں سیکورٹی اداروں نے ہوٹلوں کو خالی کرانا شروع کر دیا ہے ۔ حکام نے ہوٹل مالکان کو 3 روز تک کسی مسافر کو ہوٹل میں نہ ٹھہرانے کی ہدایات بھی جاری کی ہیں ۔

مزید : صفحہ اول