پانی چوری کی روک تھام اوربہترترسیل میں کسانوں کی معاونت کی جائے

پانی چوری کی روک تھام اوربہترترسیل میں کسانوں کی معاونت کی جائے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور( اپنے خبر نگار سے )صوبائی وزیر آبپاشی و چیئرمین پیڈا امانت اللہ شادی خیل نے کہا ہے کہ اریگیشن سروس ڈلیوری کی بہتر ی اور ترقیاتی سکیموں کی بروقت تکمیل سے عوامی بھلائی کے منصوبہ جات کے ثمرات سے کسان برادری بھرپور استفادہ کر رہی ہے۔ پانی کی ترسیل میں بہتری اور پانی چوری کی روک تھام کے معاملے میں کسانوں کی بھرپور معاونت کی جائے ۔یہ بات انہوں نے اریگیشن سیکرٹیریٹ میں ایک اجلاس کی صدارت کے دوران کہی۔ اس موقع پر ایڈیشنل سیکرٹری (ٹیکنیکل ) عابد علاؤالدین ، چیف انجینئر پلاننگ اینڈ ریویو کیپٹن (ر) عبدالقدیر خان اور جی ایم پیڈا میاں اجمل سمیت دیگر متعلقہ افسران موجود تھے۔اجلاس میں صوبائی وزیر کو اصلاح آبپاشی سے متعلقہ ترقیاتی سکیموں کے بارے میں دوران بریفنگ بتایا گیا کہ رواں مالی سال میں 41 ارب روپے سے زائد رقم مختص کی گئی ہے، جس کی مدد سے نہروں کی پختگی ، چھوٹے ڈیموں کی تعمیر، بیراجوں کی بحالی اور پانی چوری کی روک تھام کے لئے ضروری اقدامات کے ساتھ ساتھ ڈرینج سسٹم کی بحالی کی ترقیاتی سکیموں پر عملدرآمد یقینی بنایا جارہا ہے۔

نہری تنصیبات کی سیکیورٹی بہتر بنانے کے لئے بھی خصوصی اقدامات کئے جا رہے ہیں۔

صوبائی وزیر آبپاشی امانت اللہ شادی خیل نے ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ کسان برادری کے آبی حقوق کا تحفظ یقینی بنایا جائے اوراپنے فرائض میں غفلت کرنے والے سٹاف کو وارننگ جاری کی جائے تا کہ ترقیاتی کام متاثر نہ ہوں ۔ ترقیاتی امور کی انجام دہی میں کسی قسم کی رکاوٹ ہو تو انہیں فوراً آگاہ کیا جائے تا کہ اعلیٰ حکام کی بروقت معاونت حاصل کی جا سکے۔

مزید :

کامرس -