نیورو انسٹی ٹیوٹ میں پی جی ایم آئی کے کلاس روم نا منظور،ڈاکٹروں کی ہڑتال

نیورو انسٹی ٹیوٹ میں پی جی ایم آئی کے کلاس روم نا منظور،ڈاکٹروں کی ہڑتال

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(جاوید اقبال )پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف نیورو سائنسز میں پی جی ایم آئی اور امیر الدین میڈیکل کالج کے کلاس روم قائم کرنے کے خلاف نیورور سرجری کے ڈاکٹروں نے ہڑتال کردی اور احتجاج کرتے ہوئے پی جی ایم آئی کے سیمپوزیم جہاں پرنسپل پروفیسرز اور ماہرین شریک تھے کا گھیراؤ کر لیا اور زبردست احتجاج کیا اور پرنسپل کے خلاف نعرے بازی کی ۔ڈاکٹروں نے کہا کہ پرنسپل نیورو سرجری کے دشمن نہ بنیں پینز وزیراعلی پنجاب کا ایک خواب ہے جس کے ٹکڑ ے ٹکڑے کئے جارہے ہیں ایسا نہیں ہونے دیا جائے گا پینز کے لئے مخصوص ملک کی پہلی تھری ٹیسلہ ایم آر آئی کو عمارت میں پی سی ون میں موجود اور مخصوص بیسمنٹ میں ہی نصب کیا جائے گا وگرنہ نیورو سائنسز کے تمام شعبہ جات میں ڈاکٹرز اور عملہ کام بند کردے گا ۔گزشتہ روز پینز کی عمارت کے پانچویں فلور پر پرنسپل نے دو روزہ پی جی ایم آئی سیمپوزیم کا ابھی آغاز کیا ہی تھا کہ اطلاع پا کر پینز کے تمام شعبہ جات کے ڈاکٹرز اور عملہ جن کی تعداد سو کے قریب تھی نے کام بند کردیا اور اکٹھے ہو کر احتجاج شروع کردیا اور احتجاجی ریلی کی صورت میں سیپموزیم کے باہر پہنچ گئے۔ڈاکٹرز نے کہا کہ پاکستان میں پینز کی شکل میں پہلا ماڈل نیورز سائنسز کا مرکز بنایا گیا ہے جو کہ وزیر اعلی شہباز شریف کے ویژن کی عکاسی کرتا ہے مگر اس ادارے کی خود مختاری رکوانے کے لئے ایم آر آئی کی جگہ بھی تبدیل کرائی جارہی ہے۔ نیورو سرجری کے تمام پروفیسرز موقع پر پہنچ گئے احتجاجی ڈاکٹروں سے پرنسپل غیاث النبی طیب، پروفیسر خالد سابق پرنسپل پروفیسر آف نیورو سرجری ڈاکٹر انور چودھری اور پروفیسر آغا شبیر نے کامیاب مذاکرت کئے اور انہیں یقین دہانی کروائی کہ پینز قائم رہے گا ۔انہوں نے کہا کہ احتجاج نہ کیا جائے احتجاج مسئلے کا حل نہیں ہے آپ پرنسپل سے ملیں مسئلہ حل کر لیں گے ۔اس موقع پر پرنسپل پروفیسر غیاث النبی طیب نے احتجاجی ڈاکٹرز سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ آپ ہڑتال کی طرف نہ جائیں ہر ادارے کو قوانین کے مطابق لمیٹڈ خود مختاری دی جائے گی اور ایم آر آئی تہہ خانہ میں لگوائیں گے جس پر ڈاکٹرز نے احتجاج اور ہڑتال موخر کردی اس موقع پر پرنسپل نے کہا کہ اسے پی سی ون کے مطابق ہی لگایا جائے گا ۔