میرے والد اور بھائی نے میرے شوہر کو قتل کیا، مجھے بھی گولیاں ماریں ،لو میرج کرنے والی خاتون کا عدالت میں بیان

میرے والد اور بھائی نے میرے شوہر کو قتل کیا، مجھے بھی گولیاں ماریں ،لو میرج ...
میرے والد اور بھائی نے میرے شوہر کو قتل کیا، مجھے بھی گولیاں ماریں ،لو میرج کرنے والی خاتون کا عدالت میں بیان

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(نامہ نگار)ایڈیشنل سیشن جج فیصل محمود میر کی عدالت میں محبت کی شادی کرنے والے نعیم کے قتل کیس کی سماعت شروع ہوگئی ،متاثرہ بیوہ نے اپنے بیان قلمبند کراتے ہوئے کہا کہ پسندکی شادی کرنے پرمیرے شوہر کومیرے بھائی اوروالدنے قتل کیا ہے جبکہ مجھ پر بھی فائرنگ کی گئی لیکن میں معجزانہ طور پر بچ گئی ۔

کلر سیداں کے قریب طیارہ گرنے کی متضاد اطلاعات، جنگلات میں بڑے پیمانے پر آگ پھیل گئی امدادی ٹیمیں روانہ

مقتول کی بیوی نادیہ کو پولیس نے گزشتہ روزبیان قلمبندکروانے کے لئے سخت حفاظت میں عدالت پیش کیاتھا،عدالت میں تھانہ نشترکالونی پولیس نے نادیہ نامی لڑکی سے محبت کی شادی کرنے والے لڑکے محمد نعیم کو قتل کرنے کے الزام میں لڑکی کے بھائی اظہر محمد دین نذیر اور عباس کے خلاف چالان پیش کررکھا ہے۔ عدالت میں چالان آنے پر فاضل جج نے لڑکی نادیہ کو گزشتہ روزبیان کے لئے طلب کیا گیا تھا،واضح رہے کہ عدالت میں نادیہ کے وکیل نے درخواست دائر کررکھی تھی کہ نادیہ کی جان کا خطرہ ہے کیونکہ وہ چشم دید گواہ ہے اور ملزمان اس کو بھی قتل کرنا چاہتے ہیں لہذا سکیورٹی فراہم کی جائے جس پر عدالت نے پولیس کو حکم دیا تھاکہ لڑکی کو اپنی حفاظت میں عدالت بیان کے لئے پیش کیا جائے ۔عدالت میں لڑکی نے اپنا بیان قلمبند کرواتے ہوئے کہا کہ اس نے محبت کی شادی نعیم کے ساتھ کی تھی تاہم والدین کو یہ بات پسند نہیں تھی انہوں نے میرے شوہرکو قتل کردیا مجھے بھی گولیاں ماری لیکن میں بچ گئی ،عدالت میں ملزمان کے وکیل نے عدالت سے لڑکی پر جرح کے لئے مہلت طلب کی جس پر عدالت نے کیس کی مزیدسماعت 6اپریل تک ملتوی کردی ہے۔

مزید :

لاہور -