وزیراعظم نواز شریف کے پر کاٹنے کی کوشش کی جارہی ہے، ملک میں ایسا ادارہ بننا چاہیے جو مجھ سمیت ہر ایک کا احتساب کر سکے:محمود خان اچکزئی

وزیراعظم نواز شریف کے پر کاٹنے کی کوشش کی جارہی ہے، ملک میں ایسا ادارہ بننا ...
وزیراعظم نواز شریف کے پر کاٹنے کی کوشش کی جارہی ہے، ملک میں ایسا ادارہ بننا چاہیے جو مجھ سمیت ہر ایک کا احتساب کر سکے:محمود خان اچکزئی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(آئی این پی)پختونخوا ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی نے کہا ہے کہ سب کو کرپشن صرف نوازشریف میں ہی کیوں نظر آتی ہے ،وزیراعظم کے پر کاٹنے کی کوشش کی جارہی ہے،نوازشریف نے تجربے سے بہت کچھ سیکھا ہے، ہر اس شخص کو دہشت گرد سمجھتا ہوں جو اپنے مقاصد بندوق کے زور پر پورا کرتا ہے، افغان باشندوں کو مردم شماری میں شامل کرنے کے حق میں نہیں ہوں، پاکستان کے گرد گھیرا تنگ ہورہا ہے ،ہمیں کسی صورت جنگی ماحول کی طرف نہیں بڑھنا چاہیے ،آئین کے تحت ملک چلائیں تو پاکستان خطے کا بہترین ملک بن سکتا ہے ، اکیسویں صدی جمہوریت کی صدی ہے ، ملک میں کبھی حقیقی جمہوریت کر پنپنے نہیں دیا گیا ،ملک میں ایسا ادارہ بننا چاہیے جو مجھ سمیت ہر ایک کا احتساب کر سکے ۔

 نجی ٹی وی چینل ’’ ڈان نیوز ‘‘ کو خصوصی انٹرویو  دیتے ہوئے محمود خان اچکزئی  نے کہا کہ سب کو کرپشن صرف میاں نوازشریف میں ہی کیوں نظر آتی ہے ؟ وزیراعظم نوازشریف کے پر کاٹنے کی کوشش کی جارہی ہے ، ان کے اپنے ہی لوگ ان کو سپورٹ نہیں کر رہے ، نوازشریف نے تجربے سے بہت کچھ سیکھا ہے ۔محمود خان اچکزئی نے کہا کہ ایسا ادارہ بننا چاہیے جو ،ججوں ،جرنیلوں ،صحافیوں اور سیاستدانوں سمیت ہر ایک کا احتساب کر سکے ،میں ضیاء الحق کے دور میں چھ سال تک مطلوب تھا ،میں  نے کوئی جرم نہیں کیا تھا صرف پاکستان اور اسلام زندہ باد کا نعرہ لگایا تھا ،ہم  صرف واضح طور پر یہ کہتے ہیں کہ ہمسایہ ممالک کیساتھ جنگی ماحول پنپنے نہیں دیں گے۔انہوں نے کہا کہ اکیسویں صدی جمہوریت کی صدی ہے ، ملک میں حقیقی جمہوریت کو پنپنے نہیں دیا گیا ، آئین کے تحت چلائیں تو پاکستان خطے کا بہترین ملک بن سکتا ہے ، ملک میں افغان باشندوں کوکیوں تنگ کیا جا رہا ہے ، افغان باشندوں کو مردم شماری میں شامل کرنے کے حق میں نہیں ہوں ۔ محمود اچکزئی نے کہا کہ پاکستان کے گرد گھیرا تنگ ہو رہا ہے ، ہمیں کسی صورت جنگی ماحول کی طرف نہیں بڑھنا چاہیے ،اگر ہم جنگی ماحول کی طرف بڑھے تو ہمیں عراق کی طرح پھنسا دیا جائیگا ۔انہوں نے کہا کہ اگر صرف 10 سال تک ملک میں حقیقی جمہوریت ہو تو ملک اب بھی خطے کا بہترین ملک ثابت ہو سکتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ یوم پاکستان کے موقع پر فوج ،ججز ، وزیر اعظم سمیت تمام ادارے ماضی کو بھلا کر نئے سرے سے عہد کریں کہ وہ آئندہ آئین اور دستور کے تحت اپنے دائرہ کار میں رہ کر کام کریں گے ۔محمود خان اچکزئی کا کہنا تھا کہ میں ہر اس شخص کو دشمن سمجھتا ہوں جو ہمارے بچوں کو مارتا ہے ،لیکن پتا نہیں میرے خلاف کیا کیا الزامات عائد کئے گئے ؟میں ہر اس شخص کو دہشت گرد سمجھتا ہوں جو اپنے مقاصد بندوق کے زور پر پورا کرتا ہے ،طالبان کو سپورٹ کرنے والے ہم خود تھے ،نصیر اللہ بابر کے بیانات سب کے سامنے اور ریکارڈ پر موجود ہیں،طالبان کو قاتل نہ کہیں ،یہ ایک لڑائی چل رہی ہے، ایک میرا تھن ریس 24 کلو میٹر کی تھی یہ میراتھن ریس اور ہے  ،امریکہ بہادر کی رہبری میں ہم دنیا جہاں کے لوگوں کو فریڈم فائٹرز کے نام پر تربیت اور ٹریننگ دی ۔

مزید :

قومی -