منفرد غزل گائیک عقیل منظورکو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے محفل موسیقی کا انعقاد

منفرد غزل گائیک عقیل منظورکو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے محفل موسیقی کا انعقاد

  

حسن عباس زیدی

پاکستان کلاسیکل میوزک گلڈ اور لاہور آرٹس کونسل کے اشتراک سے گزشتہ دنوں منفرد غزل گائیک عقیل منظورمرحوم کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لئے ایک محفل موسیقی کا انعقاد کیا گیا ۔الحمراء ہال نمبر 3میں ہونے والی اس محفل موسیقی میں ملک کے نامور گلوکاروں نے اپنے فن کا مظاہرہ کیا اور مہمانوں سے خوب داد وصول کی۔اس پروگرام کے آرگنائزر پاکستان کلاسیکل میوزک گلڈکے روح رواں استاد غلام حیدر خاں تھے ۔اس موقع پر استاد غلام حیدر خاں نے عقیل منظور کا مکمل تعارف کروایا ۔پروگرام کے آغاز میں مرحوم کے صاحبزادے سلمان عقیل نے غالب کی غزل پیش کی۔ملک محمد رفیق نے اپنے مخصوص انداز میں بابا بلھے شاہؒ کی کافی پیش کرکے خوب داد سمیٹی۔وقار احمد بسرا نے فراز کی غزل گا کر شائقین موسیقی کو داد دینے پر مجبور کیا ۔عقیل منظور کے دوسرے صاحبزادے حسنین عقیل نے اپنے والد کی شہرہ آفاق غزل ’’ٹھر جاؤ کہ حیرانی تو جائے‘‘گا محفل کو چار چاند لگا دیئے اور اپنے استاد غلام حیدر خاں کو نذرانے بھی پیش کئے اور اپنی شاگردی کا اعتراف بھی کیا۔نامور غزل گائیک محمد یعقوب نے اپنے انداز میں غزل پیش کی جبکہ استاد فیاض علی خاں نے راگ بھٹیار میں کمپوز کی ہوئی غزل سنا کر بے پناہ داد سمیٹی۔کلاسیکی موسیقی کا آغاز شاہ رخ فخر کے راگ بھیم پلاسی سے ہوا شاہ رخ فخر کلاسیکل گائیکی میں نیا ااور خوبصورت اضافہ ہیں انہوں نے اپنے مختصر آئٹم میں خوب رنگ جمایا اور داد وصول کی۔سلیم محمود نے اپنا پسندیدہ راگ سنا کر داد سمیٹی۔محفل موسیقی کے اختتام پر ابوبکر فیاض نے راگ کروانی کا خیال اور ترانہ گا کر تقریب میں رنگ بھر دیا۔

مزید :

ایڈیشن 2 -